آج کا ’’ بابا ‘‘ نواز شریف کو پاناما کی بجائے اقامہ میں سزا دے رہا اور ان کے خلاف ریفرنس کھولتا ہے، نہیں معلوم چیف جسٹس صاحب غصے کا اظہار کیوں کر رہے ہیں :سینیٹر مشاہد اللہ

اسلام آباد (سنہرادور آن لائن) پاکستان مسلم لیگ (ن)کے رہنما و وفاقی وزیر برائے موسمیاتی تبدیلی سینٹر مشاہد اللہ خان نے کہا کہ آج کا ’’بابا‘‘ نواز شریف کو پاناما میں سزا نہ دینے یا نہ دینے کے بعد اقامہ میں سزا دے رہا ہے اور ان کے خلاف ریفرنس کھولتا ہے ، میٹرو بس پورے پاکستان کیلئے ہے، لوڈ شیڈنگ پورے پاکستان کیلئے ختم ہوئی ہے صرف مسلم لیگ (ن) کیلئے نہیں، مجھے نہیں معلوم چیف جسٹس ثاقب نثار صاحب کیوں غصہ کا اظہار کررہے ہیں؟ اخلاقی یا قانونی طور پر ’’ بابے‘‘ کو یہ اختیار حاصل ہے کہ کسی کو سسیلین مافیا ’’ گاڈفادر ‘‘ یا یہ ’’ڈان ‘‘ کہے؟۔

نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے سینٹر مشاہد اللہ خان نے کہا کہ میٹرو بس پورے پاکستان کیلئے ہے، لوڈ شیڈنگ پورے پاکستان کیلئے ختم ہوئی ہے صرف مسلم لیگ (ن) کیلئے نہیں، یہ سارے منصوبے پورے پاکستان کیلئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مجھے نہیں معلوم چیف جسٹس ثاقب نثار صاحب کیوں غصہ کا اظہار کررہے ہیں؟ آج کا ’’ بابا‘‘ نواز شریف کو پاناما میں سزا نہ دینے یا نہ دینے کے بعد اقامہ میں سزا دے رہا اور ان کے خلاف ریفرنس کھولتا ہے اور نیب کو ہدایت دیا ہے، جبکہ ریفرنس دائر کرنے کا کام وہ عمران خان اور جہانگیر ترین کیلئے نہیں کرتا ، جہانگیر ترین کے خلاف ریفرنس کیوں نہیں بھجیے گئے؟۔ مشاہد اللہ خان نے کہا کہ اخلاقی یا قانونی طور پر ’’ بابے‘‘ کو یہ اختیار حاصل ہے کہ کسی کو ’’سسیلین مافیا‘‘ گاڈفادر یا یہ ’’ ڈان‘‘ کہے؟ دیکھنا چاہیے کہ نواز شریف کو درست طریقے سے ہٹایا گیا یا نہیں؟اُنہوں نے صرف اتنا کہا کہ انکے ساتھ انصاف نہیں ہوا، کچھ لوگوں کا خیال ہے آپکے ساتھ کچھ بھی ہو آپ کچھ نہ کہیں، اختلاف چوہدری نثار بھی کرتے ہیں اس میں ایسی کوئی بات نہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت ملک کے عوام کے سب سے بڑے لیڈر نواز شریف ہیں، خواہش ہے کہ نواز شریف 2018میں بھی وزیر اعظم بنیں ، سینٹ الیکشن اور جنرل الیکشن وقت پر ہونے چاہیے۔سینیٹر مشاہد اللہ خان نے کہا کہ مریم نواز ، حمزہ شہباز سمیت سب کا لیڈر نواز شریف ہے، حدیبیہ پیپر ملز کیس میں ریلیف صرف شہباز شریف کو نہیں ملا، کیس میں صرف شہباز شریف ہی نہیں بلکہ پورے خاندان کو ملوث کیا گیا تھا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں