آرمی چیف جو بھی کام کر رہے ہیں وہ ۔۔شہبازشریف نے نوازشریف کو دن میں تارے دکھا دئیے

لاہور(ویب ڈیسک): وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے کہا ہے کہ اورنج لائن پر کرپشن کا رونا دھونا قوم کو گمراہ کرنے کی سازش ہے،نیب نے مجھے طلب کیا تھا اور میں حاضر ہو گیا ، چوہدری نثار نے ملاقات میں تحفظات کا اظہارکیا، پارٹی ڈسپلن کو کوئی نہ توڑے، الزام کا سلسلہ ختم ہونا چاہیئے، نیب کرپٹ عناصر اور قرضے معاف کرانے والوں سمیت سب کے خلاف بلاامتیاز کارروائی کرے،آرمی چیف سے ملاقات کی تھی ،سربراہ پاک فوججو کام کررہے ہیں اس کی تعظیم کرنی چاہئیے ، ہمیں ملکر ملک کے دفاع کو مزید ناقابل تسخیر بنانا ہے ۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شہباز شریف نے کہاکہ آرمی چیف سے ملاقات کی وہ بالکل سیدھی بات کرتے ہیں، آرمی چیف جو کام کر رہے ہیں اس کی تعظیم کرنی چاہیئے۔ انہوں نے کہا ہمیں مل کر ملک کے دفاع کو مزید ناقابل تسخیر بنانا ہے، پاک فوج ملک کیلئے لازوال قربانیاں دے رہی ہے۔ ان کا کہنا تھا مجھے نیب نے طلب کیا اور میں وہاں گیا، نیب کے تمام سوالات کو پوری قوم کے سامنے پیش کیا، بدعنوانی جہاں بھی ہو اس کا احتساب کرنا نیب کی ذمہ داری ہے، جہاں اربوں کھربوں کھائے گئے، امید ہے نیب ان کو بھی سامنے لائے گی۔شہباز شریف کا کہنا تھا کہ موقع ملا تو خیبرپختونخوا اور سندھ کو پنجاب کے ہم پلہ کریں گے، دونوں صوبوں میں ہسپتال اور یونیورسٹیاں بنائیں گے۔ ان کا کہنا تھا۔ انہوں نے کہا جب لندن گیا تب بھی چہ مگوئیاں کی گئیں، وائرل انفلوئنزا کا شدیدحملہ ہوا تھا، اب بہتر ہوں۔ ان کا کہنا تھا چوہدری نثار نے ملاقات میں تحفظات کا اظہارکیا، پارٹی ڈسپلن کو کوئی نہ توڑے، الزام کا سلسلہ ختم ہونا چاہیئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں