ابوظہبی ٹیسٹ:نیوزی لینڈ نے 4وکٹوں پر 145رنز بنا لیے

ابو ظہبی: تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز کے آخری میچ میں نیوزی لینڈ نے پاکستان کے خلاف چائے کے وقفے پر 4وکٹوں کے نقصان پر 145رنز بنا لیے ہیں ۔ شیخ زید کرکٹ سٹیڈیم ،ابو ظہبی میں پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان آخری ٹیسٹ میں نیوزی لینڈ نے پاکستان کے خلاف ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا، مہمان ٹیم کی جانب سے ٹام لیتھم اور جیت راول نے اننگز کا آغاز کیا، ٹیسٹ ڈیبیو کرنے والے شاہین شاہ آفریدی نے ابتدا میں ہی ٹام لیتھم کو پویلین بھیج کر پاکستان کو پہلی کامیابی دلائی، لیتھم محض 4 رنز ہی بناسکے۔
دبئی ٹیسٹ کے ہیرو یاسر شاہ تیسرے اور فیصلہ کن ٹیسٹ کے پہلے روز ہی اپنی بھرپور باﺅلنگ فارم میں دکھائی دیئے اور کھانے کے وقفے تک نیوزی لینڈ کے ٹاپ آرڈر کے 3 بلے بازوں کو پویلین بھیج کر مہمان ٹیم کی مشکلات میں اضافہ کردیا۔

لیگ سپنر نے جیت راول کو 45کے انفرادی سکور پر ایل بی ڈبلیو آﺅٹ کیا ،روس ٹیلر بدقسمت رہے اور یاسر کی نیچی رہنے والی گیند پر بولڈ ہوگئے،انہیں کھاتہ کھولنے کا بھی موقع نہ ملا ، ہنری نکولس ایک رن بنا کر یاسر کو سویپ شاٹ کھیلنے کی کوشش میں بولڈ ہوگئے ، کپتان کین ولیمسن اوروکٹ کیپر بلے باز بی جے واٹلنگ نے پانچویں وکٹ کے لیے ناقابل شکست73رنز جوڑ لیے ہیں،ولیمسن71اور واٹلنگ14رنز کے ساتھ ناٹ آﺅٹ ہیں ۔

پاکستان نے محمد عباس کی جگہ شاہین شاہ آفریدی کو پلیئنگ الیون میں شامل کیا ،کپتان سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ ابوظہبی کی پچ بیٹنگ کے لئے سازگار دکھائی دیتی ہے۔دوسری جانب کیوی کپتان کین ولیم سن کا کہنا ہے کہ پچ بیٹنگ کے لیے بہتر ہے اس لیے پہلے کھیلنے کا فیصلہ کیا، نیوزی لینڈ کی ٹیم میں 2 تبدیلیاں کی گئی ہیں، نیل ویگنز کی جگہ ٹم ساﺅتھی اور اش سوڈھی کی جگہ 34 سالہ سپنر ویل سمروائیل کو شامل کیا گیا ہے۔واضح رہے کہ تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز اب تک 1-1 سے برابر ہے، پہلے ٹیسٹ میچ میں نیوزی لینڈ نے پاکستان کو سنسنی خیز مقابلے کے بعد 4رنز سے شکست دی تھی جب کہ قومی ٹیم نے دوسرے ٹیسٹ میچ میں نیوزی لینڈ کو ایک اننگز اور 16 رنز سے ہرایا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں