اب نیب گواہ کہتے ہیں کلیبری 2005 ءمیں دستیاب تھا، نوازشریف

سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کا کہنا ہے کہ گواہ نے آج کہا کہ وہ آئی ٹی ایکسپرٹ نہیں، آج بھی نیب کے گواہ نے کہا اور کل بھی کہا تھا کہ کلیبری فونٹ 2005 میں دستیاب تھا۔

انہوں نے اسلام آباد میں احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مزید کہا کہ مجھے آپ پارٹی کی صدارت سے نکال رہے ہیں تیسرا فیصلہ بھی آرہا ہے۔

نواز شریف کا مزید کہنا ہے کہ تیسرا فیصلہ میں آپ کو بتا دیتا ہوں آپ مجھے الیکشن لڑنے سے بھی نااہل کریں گے، ن لیگ کو سینیٹ الیکشن سے محروم کیا جارہا ہے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں گاڈ فادر، سیسلین مافیا، چور ڈاکو کہا گیا پھر دوسرے دن کہاجاتا ہے کہ سیاسی لیڈروں کا احترام ہے۔

سابق وزیر اعظم کا کہنا ہے کہ جے آئی ٹی کے سوالوں کا جواب آہستہ آہستہ مل رہا ہے، لوگوں کی سمجھ آرہی ہے کہ اس کیس میں کچھ نہیں۔

نواز شریف مزید کہتے ہیں کہ جب کچھ نہیں ملا تو ضمنی ریفرنسز لائے جارہے ہیں، پارٹی صدر کو نکالنا پری پول دھاندلی ہے، مجھے پتا ہے کہ یہ مجھے الیکشن لڑنے سے بھی محروم کریں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں