اسحاق ڈار کو سینٹ الیکشن لڑنے کی اجازت مل گئی

الیکشن ایپلٹ ٹریبونل لاہور نے اسحاق ڈار کو سینٹ الیکشن لڑنے کی اجازت دیتے ہوئے ریٹرننگ افسر کا ان کے خلاف دیا گیا فیصلہ کالعدم قرار دے دیا۔

اسحاق ڈار نے سینیٹ انتخابات کے لیے کاغذات نامزدگی مسترد ہونے کے اقدام کو ہائی کورٹ میں چیلنج کر رکھا تھا۔

درخواست گزار کے وکیل نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ ریٹرننگ افسر نے حقائق کے برعکس کاغذات نامزدگی مسترد کیے جبکہ میرے موکل نے الیکشن لڑنے کے لیے تمام قانونی تقاضے پورے کیے۔

سابق وزیرخزانہ کے وکیل کا مزید کہنا تھا کہ میرے موکل کو دفاع کا موقع دیئے بغیر ان کے کاغذات نامزدگی مسترد کیے گئے۔

اس موقع پر جسٹس امین الدین کی سربراہی میں ٹربیونل نے ریٹرنگ افسر کا فیصلہ کالعدم قرار دیتے ہوئے سابق وزیرخزانہ کو سینیٹ الیکشن لڑنے کی اجازت دے دی۔

دوسری جانب ایپلٹ ٹربیونل لاہور نے نزہت صادق اور سعدیہ عباسی کے خلاف اپیلیں خارج کرتے ہوئے وزیر اعظم کی ہمشیرہ اور نزہت صادق کو بھی الیکشن لڑنے کی اجازت دے دی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں