تیسرا ٹیسٹ : اظہر اور اسد کی سنچریوں سے پاکستان کی پوزیشن مضبوط

ابوظہبی میں تیسرے اور آخری ٹیسٹ کے تیسرے روز اظہر علی اور اسد شفیق کی سنچریوں کی بدولت پاکستان نیوزی لینڈ کے خلاف مستحکم پوزیشن پر آگیا ہے اور ابھی اس کی بیٹنگ جاری ہے۔

دونوں پاکستانی بلے باز اظہر اور اسد نے نیوزی لینڈ کے بولرز کو بے بس کیے رکھا اور جم کر بیٹنگ کی۔

اظہر علی 134 رنز بنا کر آوٹ ہوئے جبکہ اسد شفیق 104 رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے، ابھی بابر اعظم کے ساتھ کپتان سرفراز احمد وکٹ پر موجود ہیں۔

آج پاکستان نے 139 رنز 3 کھلاڑی آؤٹ سے اپنی نامکمل اننگ کا آغاز کیا تو اظہر علی اور اسد شفیق وکٹ پر موجود تھے۔

شیخ زید اسٹیڈیم میں کھیل کے دوسرے قومی ٹیم نے نیوزی لینڈ کے اسکور 274 رنز کے تعاقب میں اپنی اننگز کا آغاز کیا تو اوپنر محمد حفیظ بغیر کوئی رن بنائے آؤٹ ہوگئے جس کے فورا بعد امام الحق بھی 9 کے انفرادی اسکور پر پویلین لوٹ گئے۔

17 کے مجموعی اسکور پر 2 وکٹیں گرنے کے بعد حارث سہیل اور اظہر علی نے کریز پر قیام کیا اور ٹیم کا اسکور 85 رنز تک لے گئے، اس موقع پر 34 رنز بنا کر حارث سہیل ساؤتھی کا شکار بنے ۔

حارث کے آؤٹ ہوجانے کے بعد اظہر علی کا ساتھ دینے کیلئے اسد شفیق آئے اور دونوں کھلاڑیوں نے ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے دوسرے دن کے کھیل کے اختتام تک ٹیم کا اسکور 139 رنز تک پہنچا دیا۔

بابر اعظم 14 اور سرفراز احمد ایک رنز بنا کر کریز پر موجود ہیں اور پاکستان کو نیوزی لینڈ کے پہلی اننگ کا اسکور پر 38 رنز کی برتری حاصل ہے اور ابھی اس کی 5 وکٹ باقی ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں