امریکہ کو اپنی بقاء کیلئے جنگوں اور تنازعات کی ضرورت ہے:گارڈن ڈف

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) ریاست اوہیو امریکہ کے ایک معروف مبصر نے کہا ہے کہ امریکہ کو اپنی بقا ء کیلئےجنگوں وتنازعات کی ضرورت ہے اور عراق سے افغانستان فوجیں روانہ کرنے کا امریکی منصوبہ نئے بحران کو پیدا کرنے کی کوشش ہے۔

ایک انٹرویو میں ’’گارڈن ڈف ‘‘نے کہاکہ امریکہ کواپنی بقا ء کیلئےجنگوں وتنازعات کی ضرورت ہے اور عراق سے افغانستان فوجیں روانہ کرنے کا امریکی منصوبہ نئے بحران کو پیدا کرنے کی کوشش ہے۔

ایسوسیٹیڈ پریس نے مغربی ذرائع کے حوالے سے حال ہی میں ایک رپورٹ شائع کی جس میں کہاگیا کہ امریکی فوجیں عراق میں تکفیری دہشتگرد گروہ داعش کی شکست کے بعد افغانستان منتقل ہورہے ہیں ۔

گارڈن ڈف نے کہاکہ عراق سے امریکی افواج کو عراق منتقل کرنا مبینہ منصوبہ ایک غلط فیصلہ ہے اوراسے امریکہ کی جنگ پسندی ایک بار پھر ثابت ہوتی ہے۔انہوں نے کہاکہ امریکہ عراق کی طرح ہی افغانستان میں بھی تنازعے کو جاری رکھنے کی کوشش کررہا ہے۔

انہوں نے کہاکہ امریکی افواج کی ایک ملک سے دوسرے ملک منتقلی امریکہ کی پالیسی رہی ہے جس کے ذریعے امریکہ دنیا کے مختلف حصوں پر اپنے اثرورسوخ کو برقراررکھنے کی کوشش کرتا ہے ۔

ادھر امریکی ٹیلی ویژن فوکس نیوز کی ایک رپورٹ میں پنٹاگون کے اعلیٰ عہدیدار کے حوالے سے کہاگیا ہے کہ افغانستان میں امریکہ کی تازہ فوجی مہم جوئی سے امریکیوں اورعام افغان شہریوں کی ہلاکتوں میں اضافہ ہوگا ۔مذکورہ عہدیدار نے کہاکہ پنٹاگن افغانستان میں فرنٹ لائن کے قریب تعیناتی کیلئے اپنے مزید فوجی دستیں بھیج رہا ہے ۔

انہوں نے کہاکہ طالبان کا خطرے کے مقابلے کیلئے امریکہ اپریل تک مزید فوجی افغانستان بھیجے گا جسے اس ملک میں امریکی فوجیوں کی تعداد بڑ ھ کر 15 ہزار ہوجائےگی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں