آسٹریلیا نے چوتھا میچ بھی اپنے نام کرلیا

عابد علی اور محمد رضوان کی سنچریاں بھی ٹیم کے کام نہ آسکیں، آسٹریلیا نے چوتھے ون ڈے میں پاکستان کو 6رنز سے شکست دے کر سیریز میں چار۔صفر کی برتری حاصل کرلی۔

ہدف کے تعاقب میں پاکستان کی اننگز کی شروعات ڈرامائی انداز میں ہوئی اور اوپنر شان مسعود بغیر کوئی رن بنائے پویلین لوٹ گئے۔

کیئریر کا پہلا ون ڈے کھیلنے والے عابد علی نے ون ڈاؤن پوزیشن پر آنے والے حارث سہیل کے ساتھ مل کر اننگز کو آگے بڑھایا، اسکور 74 رنز تک پہنچادیا، اس موقع پر حارث سہیل 25رنز بناکر آؤٹ ہوگئے۔

وکٹ کیپر بیٹسمین محمد رضوان اور عابد علی نے تیسری وکٹ کی شراکت میں 144 رنز بناکر جیت کی امید پیدا کی۔

اس دوران عابد علی نے 118 گیندوں پر 9 چوکوں کی مدد سے 112 رنز کی انفرادی اننگز کھیلی۔ وہ پاکستان کی جانب سے ڈیبیو پر سینچری اسکور کرنے والے تیسرے کھلاڑی ہیں جبکہ ڈیبیو میں کسی بھی پاکستانی کھلاڑی کی یہ سب سے بڑی انفرادی اننگ ہے۔

عابد علی کے بعد عمر اکمل بیٹنگ کے لئے آئے لیکن وہ صرف 7رنز ہی بناسکے۔

پاکستان کی جانب سے آج کے میچ میں ڈیبیو کرنے والے دوسرے کھلاڑی سعد علی لمبی اننگز نہ کھیل سکے، وہ بھی 7رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔

اس دوران محمد رضوان نے اپنی سنچری مکمل کی، حالیہ سیریز میں یہ ان کی دوسری سنچری ہے۔

کپتان عماد وسیم صرف ایک رن بناسکے، جبکہ جیت کی آخری امید محمد رضوان 104 رنز بناکر باؤنڈری لائن پر کیچ آؤٹ ہوگئے۔

اس طرح پاکستان ٹیم مقررہ پچاس اوورز میں 8 وکٹوں کے نقصان پر 271 رنز بناسکی۔

آسٹریلیا کی طرف سے کولٹر نائیل نے تین، اسٹوئنس نے دو جبکہ رچرڈسن، لیون اور زامپا نے ایک، ایک وکٹ حاصل کی۔

سیریز کا پانچواں اور آخری میچ اتوار کو کھیلا جائے گا۔

آسٹریلیا کا پاکستان کو 278 رنز کا ہدف

اس سے قبل آسٹریلیا پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے پاکستان کو جیت کے لئے278رنز کا ہدف دیا۔

دبئی میں پاکستان نے ٹاس جیت کر مہمان ٹیم کو بیٹنگ کی دعوت دی، شعیب ملک کی جگہ عماد وسیم آج کے میچ میں ٹیم کی قیادت کی۔

فنچ اور عثمان خواجہ نے ٹیم کو اچھا آغاز دیا اور پہلی وکٹ کی شراکت میں 56 رنز بنائے، فنچ آج لمبی اننگز نہ کھیل سکے اور 39رنز بناکر محمد حسنین کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہوگئے، ایک روزہ میچوں میں یہ ان کی پہلی وکٹ ہے۔

شان مارش صرف 5 رنز بناکر عماد وسیم کا شکار ہوئے، ہینڈز کو بھی عماد وسیم نے 7 رنز پر پویلین کی راہ دکھائی۔

اسٹوئنس کو یاسر شاہ نے 2 رنز پر کلین بولڈ کیا، دوسرے اینڈ پر عثمان خواجہ نے نصف سنچری مکمل کی، وہ بھی 62 کے اسکور پر یاسر شاہ کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہوئے۔

چار وکٹیں گرنے کے بعد میکسویل اور کیرے نے ٹیم کو سہارا دیا اور چھٹی وکٹ کی شراکت میں 134 رنز بناکر پوزیشن مستحکم کردی۔

میکسویل نے شاندار بیٹنگ کرتے ہوئے 98 رنز بنائے اور سنچری سے صرف 2 رنز کی دوری پر رن آؤٹ ہوگئے۔

کیرے محمد حسنین کی گیند کو گراؤنڈ سے باہر پھینکنے کی کوشش میں 55 کے اسکور پر باؤنڈری لائن پر کیچ آؤٹ ہوئے۔

یوں آسٹریلیا نے مقررہ پچاس اوورز میں 7 وکٹوں کے نقصان پر 277 رنز بنائے۔

محمد حسنین، عماد وسیم اور یاسر شاہ نے دو، دو وکٹیں حاصل کیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں