بلاول بھٹو زرداری کا تھر کے غریب لوگوں کو مفت بجلی دینے کا اعلان

پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ تھر کول کی بجلی کا سب سے پہلا حق مقامی لوگوں کا تھا، لہذا سندھ حکومت تھر کے غریب لوگوں کو مفت بجلی دے گی۔

اسلام کوٹ میں تھر کول پاور پلانٹ کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو نے کہا کہ تھر منصوبے کا افتتاح کرنا میرے لئے فخر کی بات ہے جبکہ تھر پاور پلانٹ پورے پاکستان کی کامیابی ہے۔

اس سے قبل لاول بھٹو زرداری نے 330 میگاواٹ کے تھر کول پاؤر پلانٹ بلاک 2 کا افتتاح کیا۔ بلاول بھٹو کے ساتھ وزیراعلیٰ مراد علی شاہ، کابینہ اراکین، سینئر حکومتی ارکان اور چین کے سفارت کار سمیت دیگر ممالک کے سفراء موجود تھے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ این ای ڈی یونیورسٹی کا جلد تھر میں ایک کیمپس کھولا جائے گا، جبکہ تھر میں پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ سے بھی یونیورسٹی بنائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ آج سے تھر کول سے بجلی کی پیداوار شروع ہو رہی ہے اور منصوبے سے ابتدائی طور پر 330 میگاواٹ بجلی بن رہی ہے۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ مشرف کے دور میں ایک میگاواٹ بجلی نیشنل گریڈ میں شامل نہیں ہوئی، کیونکہ آمروں کی حکومت میں خود انہی کی خوشحالی ہوتی ہے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ پچھلے 5 سال بہت بڑے بڑے وعدے کیے گئے لیکن کام نہیں ہوا، باقی سب صرف باتیں کرتے اور ہم کام کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ خیبرپخونخوا کی حکومت نے ایک میگاواٹ بجلی پیدا نہیں کی۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ سندھ بھر میں پبلک پرائیوٹ پارٹنر شپ کے تحت کئی پروگرام شروع کیے جبکہ تھر کول پاکستان کا سب سے بڑا پبلک پرائیوٹ پارٹنر شپ منصوبہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ تھر سے کوئلے کی صورت میں سونا نکل رہا ہے، یہ پاکستان کی کامیابی ہے اور یہ نیا تھر نیا پاکستان ہے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ آج یوم دستور ہے اور آج کے دن بھٹو نے 73 کا آئین دیا، پیپلزپارٹی کی ڈیلیوری اور گورننس نظر آتی ہے، اس کو ہم گڈ گورننس، ڈیلیوری اور میگا پراجیکٹ کہتے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں