تاپی گیس لائن بچھانے کا اگلے مرحلے کا آغاز کر دیا گیا

ترکمانستان سے افغانستان کے راستے پاکستان اور بھارت تک گیس پائپ لائن بچھانے کے اگلے مرحلے کا آغاز کر دیا گیا ہے۔

ترکمانستان حکومت کے مطابق گیس پائپ لائن کا اگلا مرحلہ افغانستان کے اندر بچھایا جائے گا۔ ترکمانستان کے صدر قربان محمدوف کا کہنا ہے کہ دوسرے بڑے گیس کے ذخیرے سے پاکستان، بھارت اور افغانستان کے صارفین کو فائدہ پہنچے گا۔8 ارب ڈالر کے پراجیکٹ کو امریکا اور ایشائی ڈیولپمنٹ بنک کا تعاون حاصل ہے۔

واضح رہے کہ وزیر اعظم شاہد خاقان نے ترکمانستان کے شہر میری میں ترکمانستان کے صدر قربان محمدوف سے ملاقات کی تھی جس میں دونوں رہنمائوں نے دو طرفہ تعاون، توانائی، تجارت اور اقتصادی راہداری کے حوالے سے تاپی گیس پائپ لائن منصوبے کی اہمیت کو اجاگر کیا تھا اور علاقائی سیکورٹی سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر بات چیت کی تھی۔

اس موقع پر وزیراعظم کا کہنا تھا کہ یہ منصوبہ دونوں ملکوں کے درمیان دو طرفہ تعلقات میں ایک نئے باب کا اضافہ کرے گا۔

توقع ہے کہ یہ منصوبہ 2019 میں مکمل ہو گا جس سے پاکستان کو یومیہ 1325 ملین مکعب فٹ قدرتی گیس حاصل ہوگی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں