تھیٹر کا عالمی دن !

دنیا بھر کی طرح پاکستان میں بھی آج 27 مارچ کو تھیٹر کا عالمی دن منایا جارہا ہے۔ اس دن کو منانے کا مقصد تھیٹر میں کام کرنے والے فنکاروں کی حوصلہ افزائی کرنے کے علاوہ نئی سوچ اور نئی روش کو شامل کرناہے۔ اس حوالے سے آرٹس کونسل سمیت سول سوسائٹی کے زیر اہتمام تقریبات منعقد کی جائیں گی۔

ان تقریبات میں مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد تھیٹر کی اہمیت کو اُجاگر کریں گے اور اس بات کا عزم کریں گے کہ ملک میں غیر اخلاقی تھیٹر کے خاتمے اور اصلاحی ڈراموں کے فروغ کے لیے جدوجہد کی جائے گی۔

تھیٹر پوری دنیا میں فن اداکاری کا سب سے مشکل فن تصور کیا جاتا ہے۔ تھیٹر کی تاریخ بہت قدیم ہے۔ اس کا آغاز 2500قبل مسیح مصر سے ہوا تھا بعد میں اسے یونانیوں نے پروان چڑھایا۔ شیکسپئیر جیسے ڈرامہ نگار نے بھی تھیٹر کو دوام بخشا۔

پاکستان میں بھی تھیٹر کا آغاز انتہائی شاندار تھا۔ آغا حشر کاشمیری اور امتیاز علی تاج جیسے قلم کاروں نے اس حوالے سے بہت نام کمایا۔

آج کل تھیٹروں میں ڈراموں سے زیادہ کامیڈی سے کام چلایا جا رہا ہے جبکہ ضرورت اس امر کی ہے کہ لوگوں کے لئے سنجیدہ اور سماجی موضوعات پر ڈرامے پیش کیے جائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں