رائے ونڈ میں پولیس چیک پوسٹ کے قریب دھماکا، 9 افراد شہید، 20 زخمی

لاہور (سنہرادور): رائے ونڈ کے قریب دھماکے سے 9 افراد شہید جبکہ پولیس اہلکاروں سمیت 20 افراد کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔

دنیا نیوز کے ذرائع کے مطابق رائے ونڈ میں پولیس چیک پوسٹ کے نزدیک ہونے والے دھماکے میں 9 افراد شہید جبکہ اے ایس پی اور پولیس اہلکاروں سمیت 20 افراد زخمی ہو گئے۔ دھماکے کی شدت اتنی شدید تھی کہ اس سے قریب کھڑی متعدد گاڑیوں میں آگ لگ گئی۔ واقعہ کی اطلاع ملتے ہی ریسکیو کی ٹیمیں اور سیکیورٹی فورسز علاقے میں پہنچیں اور ایمبیولینسوں کے ذریعے زخمی افراد کو مختلف ہسپتالوں میں منتقل کرنے کا عمل شروع کیا۔

دھماکے میں زخمی ہونے والے بعض افراد کی حالت تشویشناک بتائی جا رہی ہے۔ ادھر قانون نافذ کرنے والے اداروں نے علاقے کو سیل کر کے آمدورفت کیلئے بند کر دیا ہے اور سیکیورٹی مزید سخت کر دی ہے۔

ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف نے میڈیا سے گفتگو میں بتایا کہ دھماکا تبلیغی اجتماع کے قریب چیک پوسٹ کے قریب ہوا جس میں پولیس کو ٹارگٹ کیا گیا تھا۔ ابتدائی طور ہر موٹر سائیکل کے استعمال بارے اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔ تاہم دھماکے کی نوعیت کے بارے میں ابھی کچھ کہنا قبل از وقت ہے۔ انہوں نے بتایا کہ زخمیوں کو ٹی ایچ کیو اور جناح منتقل کیا جا رہا ہے جن میں 9 پولیس اہلکار بھی شامل ہیں۔

لاہور پولیس کے ایس پی عمر فاروق کا میڈیا سے گفتگو میں کہنا تھا کہ دھماکا خود کش تھا یا پلانٹ؟ ابھی کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہے۔ دھماکے کے بعد لاہور کے داخلی اور خارجی راستوں پر فوری طور پر ناکہ بندی کر دی گئی ہے۔

وزیرِ اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف نے رائے ونڈ دھماکے کی شدید مذمت کرتے ہوئے انسپکٹر جنرل پولیس سے رپورٹ طلب کرتے ہوئے تحقیقات کا حکم دیدیا ہے۔ انہوں نے ہدایت کی ہے کہ زخمی ہونے والوں کو علاج معالجے کی بہترین سہولتیں فراہم کی جائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں