راولپنڈی: ایڈ یشنل ڈ پٹی کمشنر صا ئمہ یو نس کا ڈسٹرکٹ کوالٹی کنٹرول بورڈ کے جلسہ سے خطاب

راولپنڈی (سنہرادور) ایڈ یشنل ڈ پٹی کمشنر (ہیڈ کو اٹر) صا ئمہ یو نس نے کہا ہے کہ عو ام کے لئے صحت کی معیا ری سہو لیا ت یقینی بنا نے اور انہیں غیر معیا ری ادویا ت و منشیا ت سے بچا نے کے لئے عطا ئی ڈا کٹر وں، کلینکس، فا ر مسیسز اور و ئیر ہا ؤ سز کے خلا ف کر یک ڈا ؤ ن جا ری ہے جو اس گھنا ؤ نے کا روبا ر میں ملو ث ہو کر قیمیتی انسا نی جا نو ں سے کھیلتے ہیں۔ ایسے میں ڈرگ انسپکٹرز کی جا نب سے چھا پوں کے دوران شا ہی طبی دوا خا نہ بو ہڑ با زا ر، با بر دوا خا نہ ڈ ھو ک ر تہ، قا سم ٹر یڈ رز، میر برا درز میدی ما رٹ، شو کت فا ر میسی ٹیکسلا، میڈ یسن پو ا ئنٹ ٹیکسلا، بیسٹ و یز سر جیکل ٹر یڈ رزہا ئی کو رٹ روڈ، شفا ء فیملی کلینک گو جر خا ن، یا سر میڈ یکل سٹو رگو جر خان، الصمد میڈ یکل اینڈ جنر ل سٹور، گلز ار سنز، جمیل میڈ یکل سٹو ر، علی پو لٹر ی میڈ یکل سٹو ر، عمر ان کلینک میڈ یکل سٹو ر مند رہ گو جر خان میں غیر معیا ری ادویات، بناء لا ئسنس ادویا ت کی فرو خت اور کوالیفائیڈ پر سن کی عد م مو جو دگی و منا سب کو لڈ سٹو ر ج نہ ہو نے کی بناء مند ر جہ بالا سٹو رز کے چالا ن و جر ما نہ کر تے ہو ئے بعض کے لا ئسنس کینسل کر نے اور بعض کے خلا ف قا نو نی کاروائی عمل میں لا نے کا حکم دیا ہے۔
ان خیالات کا اظہا ر انہوں نے کمیٹی روم ڈپٹی کمشنرآفس میں ڈسٹرکٹ کوالٹی کنٹرول بورڈ راولپنڈی کے اجلا س کے شرکاء سے خطاب کے دوران کیا۔ اجلاس میں ایڈ یشنل کمشنر (جنرل) ملیحہ جمال، چیف ایگز یکٹو آفیسر ہیلتھ سہیل احمد چو ہد ری، فار مسٹ/ممبر راجہ اللہ د تہٰ، سیکرٹری محمد کامران نواز،ڈرگ انسپکٹر ٹیکسلا، گو جرخان، راول ٹا ؤ ن، پو ٹھو ہا ر ٹا ؤ ن اور د یگر متعلقہ سرکاری محکموں کے نما ئند گا ن کی بڑی تعداد نے شر کت کی۔
شرکاء اجلاس سے خطا ب کر تے ہو ئے ایڈ یشنل کمشنر (جنرل) ملیحہ جما ل نے کہا کہ نئے قا نو ن کے تحت غیر معیاری ادویات کی فر وخت میں ملو ث افراد کے لئے تین ملین جر ما نہ اور کم از کم تین سا ل کی قید مقر رکی گئی ہے۔انہو ں نے کہا کہ منشیا ت کے خا تمے کے لئے قا نو نی کاروائی کے ساتھ ساتھ لو گو ں میں شعو ر و آگاہی کے لئے سکولوں اور کا لجز میں آگا ہی سیشنز رکھیں جا ئیں اورنو جو انو ں میں صحت مند انہ سرگرمیو ں کو فر وغ دیا جا ئے۔ملیحہ جما ل نے مز ید کہا کہ منشیا ت کے خلا ف کریک ڈ ا ؤن کو تیز کیا جا ئے اور اس گھنا ؤ نے کاروبار میں ملو ث افراد جو کہ نو جوانوں کی زند گی سے کھیلتے ہیں، ان کے خلاف سخت قا نو نی کا روائی عمل میں لا ئی جا ئے نیز شہر کو منشیات سے پاک کر نے کے لئے ٹھوس اور مر بو ط اقدامات کئے جا ئیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں