رمضان گھانچی پر فائرنگ، ٹمبر مارکیٹ عہدیدار بیٹے سمیت گرفتار

کراچی میں پانی کے تنازع پر رکن سندھ اسمبلی کی جان جاتے جاتے رہ گئی، پانی کے تنازع پر فائرنگ سے پی ٹی آئی کے رکن سندھ اسمبلی رمضان گھانچی کو زخمی کرنے کے الزام میں ٹمبر مارکیٹ کے عہدیدار سلیمان سومرواور ان کے بیٹے کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔

فائرنگ کے واقعے کا مقدمہ نیپئرتھانے میں زخمی ایم پی اے رمضان گھانچی کی مدعیت میں درج کیا گیا ہے۔

گھاس منڈی میں واقع پرانا حاجی کیمپ ٹمبر مارکیٹ کے قریب جھگڑے کے دوران فائرنگ سے پی ٹی آئی کے رکن سندھ اسمبلی رمضان گھانچی ٹانگ میں گولی لگنے سے زخمی ہوگئے جنہیں فوری طوری پرسول اسپتال منتقل کردیا گیا۔

اسپتال ذرائع کا کہنا ہے کہ رمضان گھانچی کی ٹانگ میں گولی لگی تھی، اسپتال میں انہیں طبی امداد دی گئی اور ان کی حالت خطرے سے باہر ہے۔

ایس ایس پی سٹی مقدس حیدر کا کہنا ہے کہ رمضان گھانچی کو فائرنگ سے زخمی کرنے کا واقعہ پانی کی لائن کے تنازع پر پیش آیا ہے۔

دوسری جانب پیپلز پارٹی کے رہنما اور وزیر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن نے مکیش چاولہ نے ملزمان کے خلاف کارروائی کی یقین دہانی کرائی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں