سابق سینیٹر فیصل رضا عابدی کا الزامات کیخلاف دفاع پیش کرنے کا فیصلہ

اعلٰی عدلیہ کے خلاف اشتعال انگیز انٹرویو کا کیس حتمی مرحلے میں داخل ہوگیا، سابق سینیٹر فیصل رضا عابدی نے الزامات کے خلاف دفاع پیش کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

اسلام آباد کی انسداد دہشتگردی عدالت کے جج شاہ رخ ارجمند نے کیس کی سماعت کی، سماعت کے دوران فیصل رضا عابدی نے دفعہ تین سو چالیس کی شق دو کے تحت بیان ریکارڈ کرادیا ۔

انہوں نے موقف اپنایا کہ کبھی کسی ملکی ادارے کو دھمکی نہیں دی۔ عدلیہ کی توہین کا سوچ بھی نہیں سکتا، ساری زندگی آئین پاکستان کا دفاع کروں گا۔

سماعت کے دوران فیصل رضا عابدی پر جرح بھی مکمل کرلی گئی بعد میں کیس کی سماعت اٹھارہ اپریل تک ملتوی کردی گئی ۔

سابق سینیٹر نے آئندہ سماعت پر الزامات کے خلاف دستاویزی دفاع پیش کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں