سوشل میڈیا اسٹار پریا پرکاش نے سپریم کورٹ سے رجوع کر لیا

کیرالہ: سوشل میڈیا اسٹار پریا پرکاش واریئر کے خلاف مسلمانوں کے جذبات مجروح کرنے پر بھارتی مسلمانوں کی جانب سے شکایت درج کرائی گئی تھی تاہم اب پریا پرکاش نے اپنے خلاف درج ہوئی شکایت منسوخ کرنے کے لئے سپریم کورٹ میں اپیل دائر کر دی۔ ایک ویڈیو کے ذریعے راتوں رات سپر اسٹار بننے والی بھارتی ملیالم فلم انڈسٹری کی خوبرو اداکارہ پریا پرکاش واریئر ایک عام سی اداکارہ سے بھارت کی سب سے بڑی اسٹار بن چکی ہیں۔ تاہم جس ویڈیو نے انہیں اسٹار بنایا اب وہی ویڈیو ان کے لیے پریشانی کا سبب بنی ہوئی ہے۔ 24 سیکنڈ کی یہ ویڈیو دراصل ملیا لم فلم’’اورو آدھار لو‘‘کے گانے ’’مانیکا ملارایا پووی‘‘کی ہے جس میں پریا ساتھی اداکار روشن عبد الرؤف کے ساتھ آنکھوں ہی آنکھوں میں باتیں کرتی نظر آ رہی ہیں۔ گانا ملیالم زبان میں بنایا گیا ہے تاہم جب اس کا ترجمہ انگریزی میں کیا گیا تو انکشاف ہوا کہ اس کی شاعری میں کچھ ایسے الفاظ استعمال کیے گئے ہیں جن سے مسلمانوں کے جذبات مجروح ہوتے ہیں لہٰذا گانا ریلیز ہونے کے فوراً بعد بھارت کے شہر حیدرآباد سے تعلق رکھنے والے مسلمانوں کے ایک گروپ نے اداکارہ پریا پرکاش، فلم کے ہدایت کار عمر عبداللہ وہاب اور پروڈیوسر جوزف والا کوزے کے خلاف شکایت درج کرائی تھی، جس میں انہوں نے مؤقف اختیار کرتے ہوئے کہا تھا کہ گانے کی شاعری سے مسلمانوں کو تکلیف پہنچی ہے لہٰذا یا تو اس گانے پر پابندی لگائی جائے یا اس گانے کی شاعری میں استعمال ہوئے الفاظ کو تبدیل کیا جائے

ویڈیو دیکھیے:

اپنا تبصرہ بھیجیں