ضمنی ریفرنسز: نوازشریف کو آج دوبارہ حاضری سے استثنا

احتساب عدالت میں سابق وزیراعظم نواز شریف کے خلاف فلیگ شپ انویسٹمنٹ اور العزیزیہ اسٹیل ملز کے ضمنی ریفرنسز پر سماعت میں وقفہ کردیا گیا ہے جبکہ نواز شریف کو وقفے کے بعد دوبارہ حاضری سے استثنا دے دیا گیا۔

احتساب عدالت اسلام آباد کے جج محمد بشیر نے سابق وزیراعظم کے خلاف ضمنی ریفرنسز پر سماعت کا آغاز کیا تاہم نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث کی سپریم کورٹ میں مصروفیت کے باعث سماعت میں پہلے ساڑھے 11 بجے اور پھر دوپہر 1 بجے تک کا وقفہ کردیا گیا۔

خواجہ حارث کی معاون وکیل عائشہ حامد نےبتایا کہ خواجہ حارث سپریم کورٹ میں مصروف ہیں، آج آٹھ گواہوں کو بیانات قلمبند کرنے کے لیے طلب کیا گیا ہے، انہوں نے عدالت سے استدعا کی کہ وقفے کے بعد کی حاضری سے نواز شریف کو استثنا دیا جائے۔

پراسیکیوٹر نیب نے سابق وزیراعظم نواز شریف کی حاضری سے استثنا کی درخواست کی مخالفت کی ان کا کہنا تھا کہ یہ قانونی تقاضا ہے کہ گواہوں کے بیانات کے موقع پر ملزم موجود ہو۔تاہم احتساب عدالت نے سابق وزیراعظم نواز شریف کو دوبارہ حاضری سے استثنا دے دیا۔

سابق وزیر اعظم محمد نواز شریف کے خلاف فلیگ شپ انوسٹمنٹ اور العزیزیہ اسٹیل ملز کے ضمنی ریفرنسز پر سماعت احتساب عدالت میںہورہی ہے ۔ عدالت نے دونوں ریفرنسز میں مجموعی طور پر 8 گواہوں کو بیانات ریکارڈ کرانے کے لیے طلب کر رکھا ہے۔

فلیگ شپ انوسٹمنٹ ریفرنس میں آف شور کمپنیوں جبکہ العزیزیہ اسٹیل ملز کی تشکیل کے حوالے سے دستاویزی شواہد کو ضمنی ریفرنسز کا حصہ بنایا گیا ہے۔

دونوں ضمنی ریفرنسز میں نواز شریف کے ساتھ حسن اور حسین نواز کو ملزم نامزد کیا گیا ہے جو عدم حاضری کے باعث پہلے ہی اشتہاری ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں