عاصمہ رانی قتل کا مرکزی ملزم شارجہ سے گرفتار

پشاور (مانیٹرنگ ڈیسک) کوہاٹ میں میڈیکل کالج کی طالبہ کو قتل کیس کے مرکزی ملزم مجاہد آفریدی کو شارجہ سے گرفتار کر لیا گیا۔آئی جی خیبر پختونخوا صلاح الدین محسود کا کہنا ہے کہ انٹرپول نے ملزم مجاہد کو شارجہ کے صنعتی علاقے سے گرفتار کر لیا ہے اور ملزم کو دستاویزی کارروائی مکمل کر کے پاکستانی حکام کے حوالے کر دیا جائے گا۔

صلاح الدین محسود کا مزید کہنا تھا کہ خیبر پختونخوا پولیس ملزم کی گرفتاری کے لیے شارجہ پولیس کے ساتھ تین سے 4 ہفتوں سے رابطے میں تھی اور ملزم کو پاکستان لانے میں وقت لگ سکتا ہے۔

خیال رہے کہ 28 جنوری کو کوہاٹ میں میڈیکل کی طالبہ عاصمہ رانی کو رشتہ نہ دینے پر مجاہد آفریدی نامی شخص نے فائرنگ کا نشانہ بنایا تھا جس سے لڑکی جاں بحق ہو گئی تھی۔چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے معاملے کا ازخود نوٹس لیتے ہوئے آئی جی خیبر پختونخوا سے رپورٹ بھی طلب کی تھی۔

عاصمہ کے قتل میں نامزد ملزم صدیق آفریدی کو گرفتار کرلیا گیا تھا جبکہ مرکزی ملزم مجاہد آفریدی بیرون ملک فرار ہو گیا تھا جس پر کے پی کے پولیس نے ملزم کی گرفتاری کے لیے انٹرپول سے رابطہ کیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں