عمران خان الزام ثابت کریں یا خاموش رہیں، شہباز شریف

پنجاب کے وزیر اعلیٰ میاں شہباز شریف کا کہنا ہے کہ عمران خان یا تو الزام ثابت کریں یا خاموش رہیں، نیازی صاحب کے الزام کا جواب دیتا ہوں تووہ پرانا الزام نہیں دہراتے بلکہ نیا الزام لگا دیتے ہیں۔

وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے مزید کہا کہ عمران خان الزامات لگاتے ہیں، انہیں عدالت بلاتی ہے تو نہ خود آتے ہیں اور نہ ان کا وکیل۔

انہوں نے مزید کہا کہ چیف جسٹس پاکستان سے درخواست ہے کہ فل بنچ بنائیں اور فیصلہ کرائیں تاکہ یہ الزام تراشیوں کا سلسلہ ختم ہو۔

شہباز شریف نے کہا کہ عمران خان نےکہاکہ سبحان نےچین کی ایس ای سی پی کے وفد کو بیان دیا، چین کی ایس ای سی پی کا وفد پاکستان آیا ہی نہیں، یہ خود چینی حکام اپنے بیان میں کہہ رہے ہیں، خان صاحب کے فیصل سبحان سے متعلق آخری جھوٹ کا جواب پتوکی کے جلسے میں دیا تھا۔

وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا کہ عمران خان جنگلہ بس اور70ارب روپے کا راگ الاپتے رہے، ٹرانسپیرنسی نے تمام کاغذات دیکھ کر کہا منصوبہ 30ارب روپے کا ہی ہے،خان صاحب نے کاغذ لہراتے ہوئے کہا کہ جاوید صادق میرا فرنٹ مین ہے،میں نے فرنٹ مین کے ذریعے 27ارب روپیہ لیا۔

شہبازشریف نے کہا کہ ہتک عزت کے کیسز میں آج تک نہ عمران خان پیش ہوئے نہ ان کے وکیل، 27ارب تو کیا 27دھیلے بھی لیے ہیں تو جرم ہے، الزام لگاتےہیں لیکن جواب نہیں دیتے،کیا یہ طریقہ ہے قوم کی قیادت کرنے کا؟

انہوں نے کہا کہ عمران خان کو احساس ندامت نہیں، بچوں کے مستقبل کا کوئی خیال نہیں، وہ ہتک عزت کیس میں تاریخ پر تاریخ لے رہے ہیں۔

میاں شہباز شریف نے کہا کہ عمران خان قوم کو دروغ گوئی کی طرف لے کر جا رہے ہیں، چیف جسٹس پاکستان فل بنچ بنائیں اور فیصلہ کرائیں تاکہ یہ معاملات ختم ہوجائیں، اگر میرا جرم ثابت ہو گیا تو قوم سے معافی مانگ کر سیاست سے کنارہ کشی کر لوں گا۔

ان کا مزید کہنا ہے کہ عمران خان تربیت حاصل کریں کہ قوم کی قیادت کرنی ہے تو جھوٹ اور دروغ گوئی کی بنیاد پر نہیں، دو سال پہلے خان صاحب نے ایک جلسے میں 7قسمیں کھائی تھیں اور ایک قسم تھی کہ جھوٹ نہیں بولوں گا، ان کے سفید جھوٹ اور الزامات کا جواب دینے پیش ہوا ہوں۔

وزیر اعلیٰ پنجاب کا کہنا ہے کہ کیا ہمیں قوم نے اس لیے ووٹ دیے کہ الزامات کا جواب دیتا رہوں، عمران خان نے 2013ء میں کہا کہ پورے پاکستان کو بجلی فراہم کروں گا،2013ءمیں موقع ملا تو پیچھے مڑ کر نہیں دیکھا، پنجاب حکومت نے 5ہزار میگاواٹ بجلی کے منصوبے لگا دیے۔

شہبازشریف نے مزید کہا کہ بلین ٹری سونامی منصوبے سے متعلق اخبارات میں آگیا کہ یہ فراڈہے، ہمیں یہ اختیار نہیں کہ بلین ٹری سونامی منصوبے پر تحقیقات سے پہلے بیان بازی کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں