عمران خان نے کراچی کے لئے 162ارب روپے کے پیکیج کی منظوری دیدی

وزیراعظم عمران خان نے کراچی میں ترقیاتی منصوبوں کے لئے 162 ارب کے پیکیج کی منظوری دے دی۔ پیکیج کے تحت 18 منصوبوں پر کام کیا جائے گاجس میں سیوریج اور ٹرانسپورٹ سمیت دیگر منصوبے بھی شامل ہیں۔ وزیراعظم نے حیدرآباد میں یونیورسٹی کی منظوری بھی دے دی۔کراچی کے لیے نیا ماسٹر پلان بنانے کا فیصلہ کیا ہے جسے 2047 کا نام دیا گیا ہے۔
وزیراعظم نے کہا کہ یہ پیکیج اپنے وسائل اور پبلک پرائیوٹ پارٹنر شپ سے تیار کیا ہے۔ پیکیج میں 18 منصوبے ہیں جس میں سے پبلک ٹرانسپورٹ کے 10 اور واٹر سیوریج کے 7 منصوبے شامل ہیں۔
وزیر اعظم نے کہا ہے کہ صاف پانی جو مسائل ہیں وہ ہم سب جانتے ہیں، کراچی میں پانی بچانے کیلئے مہم چلانا پڑے گی۔ پاکستان میں پہلے کبھی پانی بچانے کی کوئی مہم نہیں چلی۔کراچی کی ذمہ داری سندھ حکومت کی ہے لیکن سندھ حکومت اندرونِ سندھ سے کامیاب ہوتی ہے، انہوں نے جو کراچی کے ساتھ سلوک کیا وہ سب کے سامنے ہے۔
وزیراعظم نے کہا کراچی میں کچی آبادیاں سب سے زیادہ ہیں۔ کراچی کیلئے جو منصوبہ بندی کی ہے، اس پر عملدرآمد کا وقت آگیا ہے۔  سیوریج کا مسئلہ بھی سنگین ہے۔ دستیاب جگہ بچانے کیلئے بلند عمارتوں کی اجازت دیں گے۔5 اپریل کو حیدرآباد میں یونیورسٹی کا سنگ بنیاد رکھا جائے گا۔ تھرپارکر میں ایک ارب کے آر او پلانٹس لگائیں گے۔
وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہےکراچی میں ترقی کا عمل رکنے کا نقصان پورے پاکستان کو ہوا۔ پاکستان مشکل ترین معاشی حالات سے گزر رہا ہے۔ ملکی آمدن کا دو تہائی حصہ قرضوں کی ادائیگی میں چلا جاتا ہے۔
 کراچی کے ٹرانسپورٹرز کے لیے نئی ٹرانسپورٹ اسکیم متعارف کروانے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے۔ اسکیم کے تحت ٹرانسپوٹرز بینک سے آسان قرضے حاصل کرسکیں گے۔ 500 ٹرانسپورٹرز کو 500 نئی بسیں خریدنے کے لیے قرضہ دیا جائےگا۔قرضے کی مدت 6 سال ہوگی اور اس پر سود وفاق ادا کرے گا۔
لیاری ایکسپریس وے کو ہیوی ٹریفک کے لیے کھولنے کا فیصلہ کیا گیا ۔ اور ٹریک کو بہتر بنانے کے لیے 2 ارب کا خصوصی فنڈ جاری کیا جائے گا ۔
وفاقی حکومت نے کراچی کے 6 اضلاع میں شمسی توانائی کے 200 آر او پلانٹ لگانے کا منصوبہ بنایا ہے جس کے تحت ڈسٹرکٹ ویسٹ میں 5 ایم جی ڈی پانی کا آر او پلانٹ لگانے کا فیصلہ کیا گیا، کورنگی میں پانی کو قابل استعمال بنانے کے لیے ٹریٹمنٹ پلانٹ کی فنڈنگ کا فیصلہ ہوا ہے۔
 کے فور کی نئی لاگت کی 50 فیصد فنڈنگ وفاقی حکومت دے گی۔
واضح رہے وزیراعظم عمران خان دو روزہ دورے پر گزشتہ روز گوادر سے کراچی پہنچے۔ گورنر ہاؤس پہنچتے ہی عمران خان نے گورنر سندھ عمران اسماعیل سے ملاقات کی۔وزیر اعظم نے کراچی میں جاری وفاقی حکومت کے منصوبوں کو جلد مکمل کرنے کی ہدایت کر دی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں