عمران خان کے قافلے میں گاڑی نے 3 افراد پر چڑھ گئی

ملتان: عمران خان کے قافلے کا پیچھا کرنے والی گاڑی نے تیز رفتاری کے باعث تین افراد پر چڑھ گئی جس سے کانسٹیبل جاں بحق ہو گیا تفصیل کے مطابق عمران خان کیمپ کے دورے کے بعد بوسن روڈ پرجونہی بند ٹریفک کھولی گئی اس دوران سکیورٹی ڈیوٹی پر موجود ڈی ایس پی صدر سرکل مہر اسحاق سیال اپنے گن مین ممتاز کے ساتھ گاڑی کی طرف جا رہے تھے کہ اچانک پیچھے سے سفید رنگ کی کار آئی ڈرائیور تیز رفتاری پر قابو نہ رکھ سکا اور اس گاڑی نے کانسٹبل ممتاز اور دو راہ گیروں نعیم اور شاہد کو ہٹ کیا جس سے ممتاز شدید زخمی ہو گیا جبکہ دونوں راہ گیر معمولی زخمی ہو گئے ممتاز موقع دم توڑ گیا پولیس تھانہ الپہ نے سمیجہ آباد کے علاقے میں چھاپہ مار کر گاڑی قبضے میں لے کر دو افراد کو گرفتار کر لیا ہے کار سوار عادل اور نادر مانسہرہ سے آئے تھے اور عمران کے قافلے میں شامل تھے اور قافلے میں پیچھے رہ جانے کی وجہ سے انہوں نے گاڑی بھگائی جس کے باعث حادثہ ہوا پولیس نے مقدمہ درج کر لیا اور دونوں ملزمان کو حراست میں لے کر ان کی گاڑی آئی سی ٹی اے سی ایکس ۳۲۶ قبضے میں لے لی ہے ملزمان کی نمبر پلیٹ ٹوٹ کر گر گئی تھی اور ملزمان موقع سے فرار ہو کر سیمیجہ آباد چھپ گئے تھے جن کو ایس پی کینٹ ڈاکٹر فہد اور ایس پی گلگشت جلیل عمران اور ایس ایچ او الپہ رانا ظہر بابر نے سمیجہ آباد سے گرفتار کر لیا ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر کے تفتیش جاری ہے ملزمان کے مطابق وہ قافلے سے پیچھے رہ گئے تھے جس بنا پر گاڑی تیز بھگا کر قافلے سے ملنا چاہتے تھے دوسری جانب آر پی او ملتان محمد ادریس، سی پی او ملتان سرفراز فلکی اور ڈاکٹر فہد سمیت پولیس افسران نشتر پہنچ گئے اور بعد ازاں کانسٹیبل کے گھر بھی گئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں