عمران خان کے گھر کی این او سی اور نقشے جعلی نکلے

چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کے بنی گالا والے گھر کی این او سی اور نقشے جعلی نکلے ،سابق سیکریٹری یوسی بارہ کہو نے بنی گالا میں تجاوزات کے خلاف بیان سپریم کورٹ میں جمع کرادیا ۔

عمران خان کے بنی گالا والے گھر کے نقشے اور این او سی سے متعلق اہم انکشافات ہوئے ہیں،سابق سیکریٹری یوسی بارہ کہومحمد عمر نے این او سی کو جعلی قرار دیدیا ۔

سپریم کورٹ میں جمع کرائے گئے جواب میں کہا گیا ہے کہ یونین کونسل نے عمران خان کے گھرکی تعمیر کے لیے این او سی جاری نہیں کیا ، عدالت کو فراہم کی گئی دستاویز پر تحریر بھی یوسی کی نہیں ہے۔

داخل کرائے گئے جواب میں محمد عمر نے کہا کہ میں 2003ء میں یوسی بارہ کہو میں سیکریٹری تعینات تھا ،اس وقت یوسی کے دفترمیں کمپیوٹرکی سہولت ہی موجود نہیں تھی، اُس وقت یونین کونسل کے تمام امور ہاتھ سے نمٹائے جاتے تھے ۔

سابق سیکریٹری یوسی بارہ کہو نے یہ بھی بتایا کہ عمران خان سے درخواست پرمزید کارروائی کیلئے بنی گالہ کا نقشہ طلب کیا گیا تھا،جو فراہم نہیں کیا گیا جس پر مزید کوئی کارروائی عمل میں نہیں لائی گئی ۔

رپورٹ کے مطابق بنی گالہ کے گھر 300 کنال اراضی 2002ء میں جمائما کے نام پر خریدی گئی، جس کا این او سی وزارت داخلہ سے نہیں لیا گیا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں