لئی ایکسپریس وے منصوبے کو پبلک پرائیویٹ شراکت کے تحت تعمیر کیا جائے گا:عثمان بزدار

لاہور: لئی ایکسپریس وے منصوبے کی لمبائی بڑھانے کا فیصلہ کیاگیا ہے، منصوبے کی مجموعی لمبائی اب 23.2کلو میٹر ہوگی
منصوبے میں کٹاریاں سے کشمیر ہائی وے تک 6کلو میٹر کا اضافی حصہ بھی شامل، لمبائی میں اضافے سے منصوبے کی افادیت بڑھے گی
منصوبے کوجدت سے تعمیر کیا جائے گا،منصوبے کے مختلف ڈیزائن کا تفصیلی جائزہ لے کر حتمی سفارشات جلد پیش کی جائیں
لئی ایکسپریس وے کا منصوبہ راولپنڈی اور اسلام آباد کے عوام کیلئے تحریک انصاف کی حکومت کا تحفہ ہے:وزیراعلیٰ
لئی ایکسپریس وے کا منصوبہ نالہ لئی کے اردگرد کے علاقوں میں بسنے والے لوگوں کیلئے تبدیلی ثابت ہوگا:شیخ رشید
وقت آچکا ہے کہ منصوبہ مکمل کیا جائے تاکہ راولپنڈی اور اسلام آباد کے رہائشیوں کو ٹریفک کے مسائل سے نجات دلائی جاسکے
وزیراعلیٰ عثمان بزدارکی زیر صدارت پنجاب ہاؤس اسلام آباد میں لئی ایکسپریس وے منصوبے کے امور کا جائزہ لینے سے متعلق اجلاس
منصوبے کے امور کے بارے میں بریفنگ،مختلف پہلوؤں پر تبادلہ خیال،وزیر اعلی نے متعلقہ محکموں کو ضروری ہدایات جاری کیں

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدارکی زیر صدارت آج پنجاب ہاؤس اسلام آباد میں لئی ایکسپریس وے منصوبے کے امور کا جائزہ لینے سے متعلق اعلی سطح کا اجلاس منعقد ہوا۔وزیراعلیٰ کو اجلاس کے دوران منصوبے کے امور کے بارے میں بریفنگ دی گئی۔ اجلاس میں منصوبے کے مختلف پہلوؤں پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے متعلقہ محکموں اوراداروں کو ضروری ہدایات جاری کیں۔وزیراعلیٰ نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ لئی ایکسپریس وے منصوبے کو پبلک پرائیویٹ شراکت کے تحت تعمیر کیا جائے گا۔ لئی ایکسپریس وے منصوبے کی لمبائی بڑھانے کا فیصلہ کیاگیا ہے اور اس منصوبے کی مجموعی لمبائی اب 23.2کلو میٹر ہوگی۔انہوں نے کہا کہ منصوبے میں کٹاریاں سے کشمیر ہائی وے تک 6کلو میٹر کا اضافی حصہ بھی شامل کیا جائے گا۔ لمبائی میں اضافے سے لئی ایکسپریس وے منصوبے کی افادیت بڑھے گی اور اس منصوبے کی تعمیر سے راولپنڈی اور اسلام آباد کے شہریوں کو تیز آمد و رفت کی سہولت ملے گی۔ جڑواں شہروں کے لوگوں کو سیلابی صورتحال سے بچانے میں یہ منصوبہ ممد ومعاون ثابت ہوگا۔ منصوبے کوجدت اورمنفرد انداز سے تعمیر کیا جائے گا جس سے نالہ لئی کے اردگرد علاقے کی کمرشل افادیت میں اضافہ ہو گا اور کاروبار اور روزگا ر کے مواقع بھی پیدا ہونگے۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ منصوبے کے مختلف ڈیزائن کا تفصیلی جائزہ لے کر حتمی سفارشات جلد پیش کی جائیں۔انہوں نے کہا کہ لئی ایکسپریس وے کا منصوبہ راولپنڈی اور اسلام آباد کے عوام کیلئے تحریک انصاف کی حکومت کا تحفہ ہے اوراس منصوبے کی تعمیر سے نالہ لئی کے اردگرد بسنے والے لوگوں کا معیار زندگی بلند ہوگا۔ماضی کی حکومت نے اس اہم ترین منصوبے کونظراندا ز کیااوریہ منصوبہ تعطل کا شکار رہا۔ تحریک انصاف کی حکومت اس منصوبے پر جلد از جلد کام شروع کرے گی۔انہوں نے کہا کہ تمام ضروری مراحل، تقاضوں اور امور کو جلد از جلد نمٹایا جائے گا۔ منصوبے کے ڈیزائن کے حتمی فیصلے کے بعد تجاوزات کو ہٹانے اور زمین کے حصول کیلئے جامع منصوبہ بندی کے تحت اقدامات کئے جائیں گے۔ لئی ایکسپریس وے کا منصوبہ جڑواں شہروں کے لوگوں کوجدید و معیاری سہولتیں فراہم کرنے کے ہمارے پروگرام کا حصہ ہے۔ انہوں نے کہاکہ راولپنڈی کے شہریوں نے تحریک انصاف کا بھر پور ساتھ دیاہے اور تحریک انصاف کی حکومت معاشی مسائل کے باوجود راولپنڈی اور اسلام آباد کے باسیوں کو زیادہ سے زیادہ سہولیات فراہم کرنے کیلئے کوشاں ہے اور لئی ایکسپریس وے کا منصوبہ بھی اسی پروگرام کی کڑی ہے جو علاقے کیلئے عوام کیلئے خوشحالی اور تبدیلی کا پیغام ہے۔وفاقی وزیر ریلویز شیخ رشید احمد نے اس موقع پر کہا کہ لئی ایکسپریس وے مفاد عامہ کا بڑا منصوبہ 2007سے مسلسل تعطل کا شکار رہا ہے۔ اب وقت آچکا ہے کہ یہ منصوبہ مکمل کیا جائے تاکہ راولپنڈی اور اسلام آباد کے رہائشیوں کو ٹریفک کے مسائل سے نجات دلائی جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ لئی ایکسپریس وے کا منصوبہ نالہ لئی کے اردگرد کے علاقوں میں بسنے والے لوگوں کیلئے تبدیلی ثابت ہوگااور یہ منصوبہ آئندہ 15 سال کی سفری سہولتوں کو مدنظر رکھ کر ترتیب دیا جا رہا ہے۔اجلاس کے دوران وزیراعلیٰ کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ لئی ایکسپریس وے کا منصوبہ سواں پل سے کشمیر ہائی وے اسلام آباد تک تعمیر کیا جائے گا۔ اس منصوبے میں سواں سے عمار چوک تک 6.2 کلومیٹرکا حصہ،عمار چوک سے کٹاریاں پل، آئی جی پی روڈ تک 11کلو میٹر اور کٹاریاں سے کشمیر ہائی وے کا 6کلومیٹر کا حصہ شامل ہوگا۔ وفاقی وزیر ریلویزشیخ رشید احمد، انجینئر انچیف ملٹری انجینئرنگ سروس لیفٹیننٹ جنرل محمد افضل،چیف سیکرٹری پنجاب یوسف نسیم کھوکھر، ڈائریکٹر جنرل ایف ڈبلیو او میجر جنرل انعام حیدر، ڈائریکٹر جنرل این ایل سی میجر جنرل عاصم اقبال، کمشنرراولپنڈی ڈویژن، سینئر ممبر بورڈ آف ر یونیو، چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات، سیکرٹری تعمیرات ومواصلات، سیکرٹر ی ہاوسنگ، سیکرٹری آبپاشی، ایم ڈی نیسپاک، ڈائریکٹر جنرل راولپنڈی ڈویلپمنٹ اتھارٹی اور متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں