لاہور میں تحریک لبیک کا دھرنا ان شرائط پر ختم ہوا

لاہور : پنجاب کے قلب لاہور میں سات روز سے جاری تحریک لبیک کا دھرنا حکومتی اراکین کے ساتھ معاہدے کے بعد ختم ہو گیا ہے۔
تحریک لبیک یارسول اللہ نے حکومت کے سامنے چند ایسی شرائط رکھیں کہ حکومت انہیں ماننے پر تیار ہوگئی۔ دونوں فریقین کے درمیان معاہدہ کن کن شراط پر طے ہوا، ہم آپ کو بتاتے ہیں۔

معاہدے کی پہلی شرط یہ رکھی گئی ہے کہ اسلام آباد معاہدہ کی شق نمبر تین پر فوری اور مکمل عمل ہوگا۔
راجہ ظفر الحق کی سربراہ میں بننے والی کمیٹی کی رپورٹ کو ہر صورت 20 دسمبر تک عام کیا جائے گا۔
حکومت پنجاب مساجد پر لاوڈ اسپیکر کی تعداد کے حوالے سے تمام مکاتب فکر کے علماء پر مشتمل ایک کمیٹی تشکیل دے، جو سفارشات کی روشنی میں مطلوبہ قانون سازی 16 جنوری 2018 تک مکل کرے۔
وفاقی حکومت اور تحریک لبیک تیس نومبر کے معاہدے کے تمام نکات پر جلد عمل کرے۔
متحدہ علماء بورڈ صوبہ پنجاب میں دینی شعائر کے حوالے سے نصب تعلیم کا جائزہ لے گا۔
معاہدے کے آخر میں خواجہ سعد رفیق سمیت دیگر ممبران کے دستخط بھی موجود ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں