محسود قبائل کے دھرنے میں پیپلزپارٹی کے وفد کی آمد پر ہنگامہ

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) اسلام آباد میں جاری محسود قبائل کے دھرنے میں مشتعل افراد نے پیپلزپارٹی کے وفد پر جوتے اور بوتلیں پھینک دیں۔اسلام آباد میں نیشنل پریس کلب کے سامنے 4 روز سے محسود قبائل کا دھرنا جاری ہے جس میں کراچی میں نقیب اللہ محسود کو ماوارائے عدالت قتل کرنے والے ایس ایس پی راؤ انوار کی گرفتاری سمیت کئی مطالبات شامل ہیں۔دھرنے میں مختلف سیاسی و مذہبی جماعتوں کے رہنما اور وفود شرکت کے لیے آرہے ہیں۔

پیپلزپارٹی کے نمائندہ وفد نے عامر فدا پراچہ کی سربراہی میں دھرنے میں شرکت کی اور جیسے ہی وہ تقریر کے لیے اسٹیج پر پہنچے تو مشتعل مظاہرین نے ان کی طرف جوتے اور پانی کی بوتلیں پھینکیں تاہم وہ محفوظ رہے اور ان کی زد میں نہیں آئے۔

مشتعل مظاہرین کی جانب سے شیم شیم کے نعرے بھی لگائے گئے مگر وہاں موجود قبائلی عمائدین نے مشتعل نوجوانوں کو اسٹیج کے سامنے سے ہٹا کر معاملہ رفع دفع کیا۔

یاد رہے کہ جنوبی وزیرستان، خیبر پختونخوا سمیت ملک کے مختلف علاقوں سے قبائلی عوام اسلام آباد میں جمع ہیں اور راؤ انوار کی گرفتاری سمیت کئی مطالبات کے حق میں دھرنے دیئے بیٹھے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں