معدومیت کا شکار انڈس بلائنڈ ڈولفن کی تعداد میں خوشگوار اضافہ

مقامی زبان میں بھُلن کے نام سے جانی جانے والی بلائنڈ ڈولفن، پاکستان میں دریائے سندھ کے 808 کلومیٹر لمبے حصے میں پائی جاتی ہے۔

ڈبلیو ڈبلیو ایف کے سال 2017 کے سروے میں دریائے سندھ میں کل 1,816 ڈولفن دیکھی گئی ہیں جن کی تعداد 2011 میں صرف 1312 تھی۔ اس طرح سے پاکستان کی پہچان انڈس ڈولفن کی تعداد میں آہستہ آہستہ اضافہ ہونا شروع ہوچکا ھے. یاد رہے بلائنڈ ڈولفن کی یہ نسل صرف دریائے سندھ میں پائی جاتی ہے اور اس کی نسل معدومیت کے خطرے سے دوچار ہے.

اپنا تبصرہ بھیجیں