ملت تشیع کے جبری گمشدہ افراد کی بازیابی کیلئے احتجاجی مظاہرہ

راولپنڈی( اپنے رپورٹر سے، اپنے نامہ نگار سے) ملت تشیع کے جبری گمشدہ افراد کی بازیابی کے لیے راولپنڈی پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس کی قیادت سیدہ صندلین رضوی نے کی۔ملت تشیع کے لاپتہ افراد کے خاندانوں سے اظہار یکجہتی کرنے کے لیے بزرگ، خواتین اور بچے مظاہرے میں شریک تھے۔مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے سیدہ صندلین رضوی نے کہا کہ طاغوتی طاقتوں کو سب سے زیادہ خطرہ بیدار قوموں سے ہیں۔تحریک پاکستان سے حصول پاکستان تک ہماری لاتعداد قربانیاں ہیں جن کے نتیجے میں اس وطن کو حاصل کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ ہمارے نوجوانوں کو جبری طور پر لاپتا کیا جا رہا ہے۔ ۔انہوں نے کہا کہ لاپتہ افرادکو قانون کے مطابق عدالت کے کٹہرے میں لایا جائے ۔مجلس وحدت مسلمین راولپنڈی کے سیکرٹری جنرل علامہ سید علی اکبر کاظمی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وطن کی محبت ہمارے ایمان کا جز ہے۔ ہمارے بے گناہ لوگوں کو گھروں سے اٹھا لیا جاتا ہے اور ہم وطن کی محبت میں سب برداشت کر رہے ہیں۔انہوں نے کہ آج کا یہ احتجاج علامتی ہے۔ ہم کراچی میں ہونے والے مرکزی احتجاج کے منتظمین کی کال کے منتظر ہیں۔اگر جبری گمشدہ افراد کی بازیابی کے لیے بھرپور احتجاج یا دھرنے کی کال دی گئی تو پھر اپنے مقصد کے حصول تک ہمیں پیچھے نہیں ہٹایا جا سکے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں