نئے عیسوی سال کی آمد پر سکیورٹی ہائی الرٹ

نئے عیسوی سال کی آمد پرپاکستان سمیت یورپ، امریکا ، ہندوستان اور کئی ممالک میں سخت ترین سیکیورٹی اقدامات کیے گئے ہیں۔ جبکہ نیو یارک میں سیکورٹی کی اضافی نفری کے علاوہ بم ڈسپوزل اسکواڈ پہنچا دیے گئے ہیں۔

موصولہ رپورٹوں کے مطابق نئے سال کی آمد قریب آتے ہی نیویارک میں سیکورٹی کے خصوصی انتظامات کر دیے گئے، سیکورٹی کی اضافی نفری کے علاوہ بم ڈسپوزل اسکواڈ کے خصوصی دستے بھی تعینات کیے گئے ہیں جبکہ بلند عمارتوں پر ماہر نشانہ باز ڈیوٹی انجام دیں گے۔

خاص طور پر نیویارک کے ٹائمز اسکوائر پر سیکورٹی کے خصوصی انتظامات کیے گئے ہیں ان میں خصوصی تربیت یافتہ کتے بھی شامل ہوں گے، جو دھماکا خیز مواد کو سونگھنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔

ادھر برطانوی دارالحکومت لندن میں بھی نئے سال کی آمدکے موقع پر خصوصی انتظامات کیے جارہے ہیں، معروف شاہراہوں اور مصروف شاپنگ سینٹرز کے اطراف خصوصی بیریئرز لگائے گئے ہیں جبکہ پولیس اہلکاروں کے علاوہ سادہ لباس اہلکار اور خصوصی تربیت یافتہ کتے بھی گشت پر مامور کیے گئے ہیں۔

جبکہ پیرس میں 2 ہزار فوجی، 10 ہزار پولیس اور ریسکیو اہل کار تعینات کردیے گئے ہیں۔ ہندوستان اور پاکستان میں بھی نئے سال کی آمد کے موقع پر سکیورٹی لان تشکیل دیا گیا ہے۔

پاکستان کی حکومت نے نئے عیسوی سال کے موقع پر ملک بھر میں ہوائی فائرنگ، موٹر سائیکل کی ون وہیلنگ اور ریسنگ پر پابندی لگادی ہے۔ پابندی کا اطلاق 31 دسمبر کی شام سے یکم جنوری کی صبح تک ہوگا۔

پولیس نے نیو ایئرنائٹ کے موقع پر کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے بچنے اور دہشتگردی کی ممکنہ کارروائی کے تدارک کےلیے خصوصی سیکیورٹی پلان تشکیل دے دیا ہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں