نواز شریف 300 ارب کی چوری کا جواب دینے کے بجائے کہتا ہے کہ مجھے کیوں نکالا؟ : عمران خان

چکوال: (سنہرادور) چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے چکوال میں جلسۂ عام سے خطاب کرتے ہوئے ایک بار پھر سابق وزیر اعظم نواز شریف کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا۔ان کا کہنا تھا کہ چور سعودی عرب جا کر گھٹنے پکڑتا ہے کہ مجھے بچا لو، جواب دینے کی بجائے اداروں کو بدنام کیا جا رہا ہے، کرپشن کے خاتمے کا آغاز بڑے بڑے عہدوں سے کرنا ہو گا۔

چکوال میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ چوری کرنے والے کو عزت نہیں دیتے، نواز شریف چوری میں پکڑے گئے ہیں، انہوں نے قوم کے 300 ارب روپے چوری کئے ہیں لیکن اب وہ چوری کا جواب دینے کی بجائے کہتے ہیں مجھے کیوں نکالا؟ یعنی چور جواب دینے کی بجائے اداروں کو بدنام کر رہا ہے۔

عمران خان نے کہا کہ قوم کا پیسہ باہر جاتا ہے تو ملک مقروض ہو جاتا ہے، قرض نہ لیتے تو آج ٹرمپ کے ہاتھوں ذلت کا سامنا نہ کرنا پڑتا، نواز شریف جیسے لوگ جھوٹے اور دھوکے باز ہیں، ان لوگوں کی وجہ سے قوم کو ذلت کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ عمران خان نے کہا کہ امریکہ ہمیں 25 ارب کے قرض کیلئے ذلیل کر رہا ہے جبکہ اسحاق ڈار کے بیٹوں کے دبئی میں 25 ارب کے ٹاور اور نواز شریف کا لندن میں 300 ارب پڑا ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر ان لوگوں نے ہمارا پیسہ نہ لوٹا ہوتا تو آج قوم کا یہ حال نہ ہوتا، پاکستان کو منی لانڈرنگ نے تباہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ نئے پاکستان میں یہاں سے ہی پیسہ اکٹھا کر کے دکھاؤں گا، ایف بی آر کو ٹھیک کریں گے، بڑے ڈاکوؤں کو پکڑیں گے اور ایک دن دنیا ہرے پاسپورٹ کی عزت کرے گی۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ 4 سال میں پاکستانیوں نے دبئی میں 800 ارب کی پراپرٹی خریدی۔

چیئرمین پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ ملک ٹھیک کرنے کیلئے صرف 200 ایماندار آدمی چاہیں، خیبر پختونخوا میں آئی جی نے پولیس کے نظام کو ٹھیک کر دیا ہے، خیبر پختونخوا کے ڈپٹی کمشنر دفتر میں بیٹھنے کی بجائے کھلی کچہریاں لگاتے ہیں، تبدیلی کا مطلب عوام کی زندگی میں آسانیاں پیدا کرنا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ملک کے نوجوان بے روزگار اور ہسپتالوں کی حالت سب کے سامنے ہے، کیا اورنج لائن ٹرین نوجوانوں کو روزگار دے گی؟ عمران خان نے تحریک انصاف کے ضمنی الیکشن کے امیدوار کو ایڈوانس مبارکباد بھی دی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں