ن لیگ اقتدار میں ہو تو لوگ ان کا ساتھ دیتے ہیں: عمران خان

چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان کہتے ہیں کہ ن لیگ اقتدارمیں ہو تو لوگ ان کے ساتھ آ جاتے ہیں، ورنہ ساتھ چھوڑ جاتے ہیں۔

عمران خان نے انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیشی کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے مزید کہا کہ دہشت گردی کا قانون خاص مقصد کے لیے بنایا گیا تھا، شکر ہے خاقان عباسی کو یہ قانون یاد آگیا، مگر اس کا غلط استعمال کیا جارہا ہے۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ سیاسی جدوجہد کرنے والے اور نواز شریف پر جوتا پھینکنے والے دونوں پر دہشت گری کی دفعات لگا دی گئیں، مظاہرہ کرنے پر دہشت گردی کا مقدمہ کرنے کا مطلب احتجاج کا حق لینا ہے۔

عمران خان نے مطالبہ کیا کہ شریف خاندان کے خلاف احتساب عدالت کی کارروائی ضرور براہ راست دکھائی جانی چاہیے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اپنے سوچ سے وہ ٹھیک کہہ رہے ہیں کہ مجھے سیاست نہیں کرنی چاہیے تھے ،میں سیاست نہ کرتاتو ان کے بچوں کے بچوں کی قوم غلامی کر رہی ہوتی۔

عمران خان نے کہا کہ نوازشریف اور شہباز شریف نے قوم کو پاگل بنایا ہوا ہے،بڑابھائی کہتاہےسازشیں ہورہی ہیں چھوٹے بھائی کولگتاہے جنرل باجوہ سےنیاعشق ہوگیا،کوئی پاگل نہیں بنے گا، قوم اس ڈرامے کوسمجھ گئی ہے۔

تحریک انصاف کے چیئرمین نے مزید کہا کہ زرداری سے اتحاد مقصد ہوتا تو نواز شریف سے الائنس کر لیتے، شکر ہے آج نوازشریف اور شاہد خاقان کو بھی آزادانہ انتخابات کی یاد آگئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ جنوبی پنجاب کے صوبے کا مطالبہ اس لئے ہوا کہ پنجاب کے 57 فیصد بجٹ صرف لاہور پر خرچ ہوگیا، جنوبی پنجاب میں احساس محرومی ہے، وہاں کے لوگ ٹھیک کہہ رہے ہیں، ہم جنوبی پنجاب کے عوام کے مطالبات کی حمایت کرتے ہیں۔

عمران خان کا یہ بھی کہنا ہے کہ منی لانڈرنگ نے آج پاکستان کے بچے بچے کو مقروض کردیا ہے،نوازشریف بتائیں کہ بچوں کے نام پر اربوں روپے کیسے کمائے اور وہ ملک سے باہر کیسے گیا؟

اپنا تبصرہ بھیجیں