ن لیگ کا بنی گالہ کیس میں فریق نہ بننے کا فیصلہ، ذرائع

مسلم لیگ ن نے بنی گالہ اراضی کیس میں سپریم کورٹ کے فیصلے تک فریق نہ بننے کا فیصلہ کیا ہے۔

میاں نوازشریف احتساب عدالت میں پیشی کے بعد پنجاب ہاؤس اسلام آباد پہنچےجہاں انہوں نے وکیلوں کے وفد اور کارکنوں سے ملاقات کی۔

پنجاب ہاؤس میں سابق وزیراعظم نوازشریف کی زیر صدارت مسلم لیگ ن کا مشاورتی اجلاس ہوا جس میں سپریم کورٹ میں عمران خان کے خلاف بنی گالا اراضی کیس کے بارے میں قانونی ماہرین اور پارٹی رہنماؤں سے مشاورت کی گئی۔

اجلاس سے قبل امکان ظاہر کیا جارہا تھا کہ مسلم لیگ (ن) چیئرمین تحریک انصاف کے بنی گالہ میں گھر کی جعلی دستاویزات کے انکشاف کے معاملے میں فریق بنے گی۔ تاہم ذرائع کے مطابق مسلم لیگ ن نے سپریم کورٹ کے فیصلے تک کیس میں فریق نہ بننے کا فیصلہ کیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہےکہ اجلاس میں فیصلہ سامنے آیا ہے کہ پارٹی جائزہ لے گی کہ سپریم کورٹ اس مقدمے کی کارروائی کیسے چلاکر فیصلہ دیتی ہے۔ اگر مقدمےکا فیصلہ میرٹ پر نہ ہوا تو ن لیگ آئندہ کا لائحہ عمل مرتب کرے گی۔

ذرائع کے مطابق نوازشریف نے قانونی ماہرین اور پارٹی رہنماؤں کومقدمے کی باریک بینی سے مانیٹرنگ کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان کی جعلسازی اور قول و فعل کے تضاد کو عوام کے سامنے نمایاں کریں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں