پاکستانی خواتین سیاستدانوں کوجنسی طور پر ہراساں کیا جاتا ہے، ریحام

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی سابق اہلیہ ریحام خان نے کہا ہے کہ پاکستان میں خواتین سیاستدانوں کوجنسی طور پر ہراساں کیا جاتا ہےاور اسی بنیاد پر پوزیشنز دی جاتی ہیں۔

جرمن نشریاتی ادارے کو دیئے گئے ایک انٹرویو میں ان کا کہنا تھا کہ خواتین سیاستدانوں کو مخالف پارٹی والے ہراساں کرتے ہیں جبکہ کئی خواتین کو آفر سے انکار پر سیاست چھوڑنی پڑی۔

انہوں نے مزید کہا کہ رواں سال انتخابات ہوتے ہوئے نظر نہیں آتے، اگر انتخابات ہوئے تو’ ہری کتاب‘ انتخابی نتائج پر اثر انداز ہوسکتی ہے۔

ریحام خان نے کہا کہ ان کی کتاب ان کی زندگی کی کہانی ہے جس میں ان کی شادیوں کے تجربے بھی شامل ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے کبھی تحریک انصاف کی سیاست میں حصہ نہیں لیا بلکہ وہی کیا جو دنیا بھر کے سیاستدانوں کی بیگمات کرتی ہیں۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ پاکستان میں آزاد صحافت کرنا بہت مشکل ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں