پاکستانی روپے کی قدر میں ریکارڈ کمی

ایک کویتی دینار 400 روپے سے تجاوز کر گیا۔سابقہ حکومت کے اختتام کے بعد روپے کی قدر میں مسلسل کمی دیکھی جار ہی ہے۔ گزشتہ دور حکومت کے آخری دن 30مئی 2018کو پاکستانی روپے کے مقابلے میں ڈالر کی اوپن مارکیٹ میں قدر115.40 روپے تھی جو تنزلی کا شکار ہو کر 120.55 روپے تک جا پہنچی ہے، اسی طرح نگران دور حکومت میں کویت دینار 400 روپے کی حد سے تجاوز کر گیا ہے جو سابقہ حکومت کے آخری دن 382.51روپے پر بند ہوئی۔ روپے کی مسلسل گراوٹ حکومتی بجٹ کے ساتھ ساتھ گھریلو بجٹ پر بھی اثر انداز ہوگی لیکن اگر ا س جانب خاطر خواہ توجہ نہ دی گئی تو یہ کمی پاکستانی صنعت کو شدید متاثر کر سکتی ہے ، جس کے چلتے صنعت کار اپنی صنعت کو دوسرے ممالک منتقل کر سکتے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں