پاکستان کی کوکنگ ایکسپرٹ زبیدہ طارق کل رات اس جہان سے کوچ کر گئیں.

زبیدہ آپا کوکنگ ایکسپرٹ کیسے بنیں؟

لاہور: (ویب ڈیسک) معروف ماہر امور خانہ داری زبیدہ آپا جمعرات کے روز کراچی میں انتقال کر گئیں۔ ان کی عمر 72 سال تھی۔ زبیدہ طارق نو بہن بھائیوں میں سب سے چھوٹی تھیں۔ زبیدہ آپا کے بہن بھائیوں میں لیجنڈ انور مقصود، فاطمہ ثریا بجیا، زہرہ نگاہ، صغریٰ کاظمی، سارہ نقوی، احمد مقصود و دیگر شامل ہیں۔

زبیدہ طارق کی شہرت کی ایک وجہ ان کا خانہ داری میں مہارت اور وہ ٹوٹکے بھی تھے جو وہ اپنے ٹی وی پروگرامز کے دوران ناظرین کو بتایا کرتی تھیں۔

زبیدہ آپا اکثر اپنے انٹرویوز میں بتاتی تھیں کہ وہ کیسے کوکنگ ایکسپرٹ بنیں۔ قصہ کچھ یوں ہے کہ جب 1966ء میں ان کی شادی اپنے کزن طارق مقصود سے ہوئی تب تک انہیں کھانا پکانا نہیں آتا تھا۔ انہوں نے پہلی بار کڑھی پکانے کا ارادہ کیا تو اس میں دہی نہ ڈالی جس کی وجہ سے کڑھی گاڑھی نہ ہوئی۔ انہوں نے بیسن اور پانی کے اس مغلوبے کو ضائع کر دیا۔ جب شام میں ان کے شوہر گھر آئے تو انہوں نے دیکھا کہ زبیدہ آپا سج سنور کر بیٹھیں ہیں۔ انہوں نے کھانے کا دریافت کیا تو زبیدہ آپا نے کہا کہ آج باہر جا کر چائینیز کھانا کھاتے ہیں۔ اس کے بعد انہوں نے اپنے شوہر کو کڑھی کی داستان سنائی۔

اس واقعے کے کچھ دن بعد ان کے شوہر کے چار پانچ دوست گھر کھانا کھانے کے لیے آئے۔ اس دن کھانے کی ساری تیاری زبیدہ آپا نے خود بغیر کسی کی مدد کے کی۔ ان کا بنایا ہوا کھانا ان کے شوہر کے دوستوں کو بہت پسند آیا۔ زبیدہ آپا اس واقعے کے حوالے سے کہتی تھیں کہ میں نے کھانا بنانے میں کسی سے مدد نہیں لی ورنہ عمر بھر کہا جاتا کہ ہم نے زبیدہ کو کھانا پکانا سکھایا ہے۔ اگلے ایک سال میں زبیدہ آپا کھانا پکانے میں طاق ہو چکی تھیں۔ وہ کہتی تھیں کہ ایک برس کے بعد وہ تین سو لوگوں کا بھی کھانا بنا لیتی تھیں۔

زبیدہ آپا نے اپنے کوکنگ کرئیر کا آغاز نوے کی دہائی میں ڈالڈا کے دسترخوان سے کیا۔ جلد ہی وہ پراگرام ملک بھر میں دیکھا جانے لگا اور تب سے زبیدہ طارق پاکستان بھر کی زبیدہ آپا بن گئیں۔ زبیدہ آپا نے اپنے دو دہائیوں پر محیط کرئیر کے دوران لاتعداد کوکنگ شوز کئیے اور ناظرین کو ان گنت گھریلو ٹوٹکے دئیے۔ زبیدہ طارق کو ان کی ساڑھیوں اور کانچ کی چوڑیوں کی وجہ سے بھی جانا جاتا تھا۔ وہ ٹی وی پر ہمیشہ ساڑھی اور ایک بازو میں کانچ کی چوڑیاں اور کنگن پہن کر آتیں تھیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں