’’پشاور دھماکے میں 10 کلو بارودی مواد استعمال ہوا‘‘

سی سی پی او پشاور قاضی جمیل کا آج پشاور میں ہونے والے دھماکے کے حوالے سے کہنا ہے کہ اس دھماکے میں 8سے 10 کلو دھماکا خیز مواد استعمال کیا گیا۔

سی سی پی او پشاور قاضی جمیل نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مزید بتایا کہ دھماکے میں سفید رنگ کی گاڑی استعمال کی گئی۔

پشاور دھماکے میں 10 کلو دھماکا خیز مواد استعمال ہوا

ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ صدر میں لگے سی سی ٹی وی کیمروں سے معلوم کیاجائے گا دھماکے میں استعمال ہونے والی وین کہاں سے آئی۔

واضح رہے کہ پشاور میں آج صبح سویرے صدر کالاباڑی میں واقع ایک ہوٹل کے قریب گاڑی میں نصب بم کا دھماکا ہوا جس سے 6 افراد زخمی ہو گئے۔

دھماکا ہوتے ہی سیکیورٹی فورسز، پولیس، بم ڈسپوزل اسکوا، ریسکیو ٹیمیں اور ایمبولینسیں دھماکے کے مقام پر پہنچ گئیں، سیکیورٹی اداروں نے علاقے کو گھیر کر آمد و رفت معطل کر دی۔

دھماکے سے قریبی عمارتوں کے شیشے ٹوٹ گئے، جبکہ کئی گاڑیوں کو بھی نقصان پہنچا ہے۔

ریسکیو ذرائع کے مطابق پشاور دھماکے کے 6زخمیوں کو لیڈی ریڈنگ اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے جہاں انہیں طبی امداد دی گئی۔

لیڈی ریڈنگ اسپتال کی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ زخمیوں کی حالت خطرے سے باہر ہے، زخمیوں میں ایک خاتون بھی شامل ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں