’پی ٹی آئی کے6 ماہ میں بجٹ خسارہ 1ہزار 30ارب ہوگیا‘

سابق وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ 6ماہ میں بجٹ خسارہ 796 ارب سے 1030 ارب ہوگیا ہے۔

میڈیا سے گفتگو میں مفتاح اسماعیل نے کہا کہ 6 مہینے کے معاشی اعداد و شمار سامنے آگئے ہیں اور وہ اچھے نہیں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جانتا ہوں وزیراعظم خوبصورت ہیں لیکن ان کی خوبصورتی6مہینوں کی معاشی تنزلی کو نہیں روک سکتی۔

مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ بجٹ خسارہ 796ارب سے بڑھ کر ایک ہزار 30 ارب ہوگیا،پی ٹی آئی نے 71 سالوں میں مالی سال کی پہلی ششماہی کا ریکارڈ خسارہ کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ یاد رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے آمدنی دگنی کرنے کا دعویٰ کیا تھا،میرے اندازے ہیں کہ رواں سال تاریخ کا بلند ترین بجٹ خسارہ ہوگا۔

سابق وزیر خزانہ نے دعویٰ کیا کہ نیپرا نے پی ٹی آئی حکومت سے کہا ہے کہ واضح کرےکہ سستی ایل این جی اور کوئلے سے چلنے والے پلانٹ کیوں نہیں چلاتے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ نیپرا نے یہ بھی استفسار کیا کہ حکومت کیوں زیادہ مہنگے فرنس آئل سے پلانٹس چلارہی ہے؟پی ٹی آئی کی طرف سے اس غیرمنطقی اور بدعنوان فیصلے کا کیا نتیجہ نکلا؟ کیا نیپرا نےحکومت کو اس کی اجازت دی ہے۔

مفتاح اسماعیل نے مزید کہا کہ ہماراٹیرف ایک روپے 80 پیسے فی یونٹ بڑھ گیا ہے،اگر اس کا اعلان کر دیا گیا تو مطلب یہ ہوگا کہ عوام مارچ کے بل میں 21 ارب40 کروڑ روپے زائد کریں گے،اس کاذمہ دارکون ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں