‘چین کی لائٹ انجینئرنگ صنعتوں کی منتقلی سے ڈھائی کروڑ ملازمتیں پیدا ہوں گی’ احسن اقبال

وفاقی وزیر داخلہ اور منصوبہ بندی پروفیسر احسن اقبال کا کہنا ہے کہ جب دنیا پاکستان پر اعتماد نہیں کر رہی تهی، اس وقت چین نے سی پیک دیا۔

کراچی: (سنہرادور آن لائن) سی پیک کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر داخلہ اور منصوبہ بندی پروفیسر احسن اقبال کا کہنا تھا کہ ترقی یافتہ ممالک میں ترقی کا عمل رک گیا ہے، مستقبل میں ایشیاء ترقی کا مرکز ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت پاکستان کی معاشی نمو 10 سال کی بلندترین سطح پر پہنچ گئی ہے، پاکستان نے چین سے بهی کم وقت میں بجلی گهر قائم کر لئے ہیں۔

وفاقی وزیر داخلہ و منصوبہ بندی نے مزید کہا کہ آج ہم مختلف پاکستان کی بات کر رہے ہیں، یہ وہی ملک ہے جہاں 20، 20 گھنٹے بجلی نہیں ہوا کرتی تھی اور آج یہاں مختلف علاقوں میں 24 سے 20 گھنٹوں کے لئے بجلی موجود ہے۔

احسن اقبال کا یہ بھی کہنا تھا کہ سی پیک کے 4 اہم اہداف ہیں۔ پہلا ہدف گوادر کی ترقی، دوسرا ہدف توانائی اور تیسرا انفراسٹرکچر کی ترقی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ خطے میں چین کی لائٹ انجینئرنگ صنعتوں کی منتقلی سے ڈھائی کروڑ ملازمتوں کے مواقع حاصل ہوں گے، اب یہ پاکستانیوں پر منحصر ہے کہ وہ اس موقع سے کتنا فائدہ اٹھاتے ہیں۔

احسن اقبال بولے، چین کے پاس ٹیکنالوجی اور سرمایہ ہے اور ہمارے پاس کم قیمت پر بہترین لوکیشن، ہم دونوں مل کر بین الاقوامی سطح پر بہترین صنعتی انقلاب لا سکتے ہیں۔

احسن اقبال کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان کو سویت یونین توڑنے کی سزا ملی، امریکہ اور یورپ کی ذمہ داری ہے کہ پاکستان کے ساته مل کر کام کریں، پاکستان نے 35 لاکھ افغان مہاجرین کا بوجھ اٹهایا ہوا ہے، افغان اور سویت جنگ کی وجہ سے ہمارے ملک میں منشیات اور اسلحہ آیا ہے۔ احسن اقبال نے دعویٰ کیا کہ پاکستان موبائل فون کی 5 جی ٹیکنالوجی متعارف کرانے والے اولین ممالک میں شامل ہو گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں