گورنمنٹ کالج یونیورسٹی کےپروفیسر کے قتل کے خلاف احتجاجی واک

لاہور: گوررنمنٹ کالج یونیورسٹی لاہور میں ڈاکٹر تنظیم اکبر چیمہ کے قتل کے خلاف پرامن احتجاجی واک کا انعقاد ہوا۔ اکیڈمک سٹاف ایسوسی ایشن کے صدر پروفیسر ڈاکٹر حامد مختار کا کہنا تھا کہ ہماری حکومت سے درخواست ہے کہ اس قتل میں جو بھی ملوث ہے اسے سخت اور جلد سزادی جائے۔ مزید برآں اس قتل کیس میں اہم پیشرفت ہوئی ، پولیس نے ایوسی ایٹ پروفیسر تنظیم چیمہ کی شاگردطالبہ سمیت5 افراد کو حراست میں لے لیا۔ دوران تفتیش بعض اہم شواہد ملے جس پر پولیس نے بعض طلباء اور ایک طالبہ کو بھی پوچھ گچھ کیلئے حراست میں لیا ہے، مذکورہ طالبہ جی سی یونیورسٹی میں ہی بی ایس سی کی سٹوڈنٹ ہے، پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ طالبہ نے میسج کیا تھا جس پر مقتول پروفیسر جائے حادثہ پر پہنچے تھے، جہاں چند منٹ بعد ہی نامعلوم افراد نے پروفیسر کو گولیاں مار کر قتل کر دیا تھا۔ذرائع کے مطابق پولیس نے تحقیقات کا دائرہ وسیع کر کے دیگر پہلوؤں پر تفتیش شروع کر دی ہے جبکہ طالبہ اور پروفیسر کے موبائل فون کا فرانزک ٹیسٹ بھی کروایا جا رہا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں