ہر ادارہ آئینی حدود کے اندر رہ کر کام کرے، وزیراعظم

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ ہر ادار ہ آئینی حدود کے اندر رہ کر کام کرے ،ضرورت اس بات کی کہ ہر ادارہ اپنا کام کرے دوسروں کا کام نہ کرے،سینیٹ انتخابات میں دھاندلی نہیں ہونے دیں گے۔

حافظ آباد میں صحت کارڈ کی تقسیم کی تقریب سے خطاب میں وزیراعظم کا کہنا تھا کہ عدالتوں میں عوامی نمائندوں کو کبھی چو ر کہا جاتا ہے ،کبھی ڈاکو کہا جاتا ہے ، یہ قبول نہیں ،پارلیمنٹ ایسا ادارہ ہے جس کا ہر 5سال بعد احتساب ہوتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ووٹ دینے جائیں تو نظر رکھیں کون ملکی مسائل پر بات کرسکتاہے ،سیاست کے فیصلے عوام پولنگ اسٹیشن میں کرتےہیں، ملک میں احتساب صرف سیاست دانوں کا ہوتا ہے،لودھراں کے عوام نے نوازشریف کی سیاست کا فیصلہ کردیا ۔

شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ ملک کو آگے بڑھانے کے لیے ضروری ہے کہ ادارے ایک دوسرے کا احترام کریں،عدالتیں جو فیصلے کرتی ہیں اسے قبول کرتے ہیں ، چاہے لوگ قبول کریں یا نہ کریں ،چاہے تاریخ قبول کرے یا نہ کرے۔پارلیمنٹ کے فیصلے بھی قبول ہونے چاہئیں۔

وزیراعظم نے مزید کہا کہ 5 سالہ دور میں اتنے پروجیکٹ مکمل کیے جن کی مثال نہیں ملتی۔ملک میں واافر مقدار میں گیس موجود ہےجبکہ بجلی کا بحران حل کردیا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں