انڈیا کی دھمکیاں ،شاہ محمود کا سلامتی کونسل کے صدر کو خط

اسلام آباد… وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے صدر کو ہند کی جانب سے پاکستان کے خلاف طاقت کے استعمال کی دھمکیوں سے متعلق خط لکھاہے۔ انہیں خطے میں سیکیورٹی کی صورتحال بگڑنے کی صورت میں خطرے اور معاملے کی صورتحال سے متعلق آگاہ کیا ہے۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ معاملے کی فوری نوعیت کے احساس کے ساتھ آپ کو خط لکھ رہا ہوں ۔ درپیش صورتحال عالمی امن وسلامتی کے لئے خطرہ کا باعث ہے ۔کشمیر میں پلوامہ و اقعہ کے فوری بعد بلاتحقیق نئی دہلی نے پاکستان پر الزام تراشی اور پاکستان کوجوابی کارروائی کی دھمکیاں دینا شروع کردیں۔ہند کے بے بنیاد الزامات کا تمام تر انحصارمشکوک مواد کی حامل سوشل میڈیا پر جاری ایک ویڈیو ہے۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ہند اپنی قیاس آرائیوں کو حقائق کا نام دینے کی کوشش کررہا ہے۔ اپنی آپریشنل اور پالیسی ناکامیوں کا ملبہ پاکستان پر ڈ النے کی کوشش میں ہے ۔ہند اپنی داخلی سیاسی وجوہ کے لئے دانستہ پاکستان کے خلاف جارحانہ روایتی فتنہ پردازی کرکے ماحول خراب کررہا ہے۔ ہندوستانی وزیراعظم عوامی جذبات انگیخت کرنے اور ”بھرپور جواب“ کی دھمکی پر مبنی بیانات دے چکے ہیں۔وزیر خارجہ نے کہا کہ ہندوستانی حکومت کے اعلی حکام دریاوں کے پانی روکنے کی دھمکیاں دے رہے ہیں جس سے دیرینہ قانونی طورپر طے شدہ سندھ طاس معاہدہ خطرات سے دوچار ہے۔پاکستان نے پلوامہ حملے سے متعلق الزامات کو پوری قوت سے مسترد کیا ہے۔پاکستان نے ٹھوس شواہد کی فراہم پر تحقیقات میں تعاون کی پیشکش کی ہے۔وزیراعظم پاکستان نے دہشت گردی اور دیگر تنازعات پر بات چیت کی دعوت دی ہے۔ پاکستان نے جارحیت کی صورت میں اپنے دفاع کے عزم کا اظہار کیا ہے۔ ہند کے پیدا کردہ ہیجان کے نتیجے میں کشمیر کے عوام پر تشدد کی نئی لہر مسلط کردی گئی۔ جموں وکشمیر کے عوام کو خودارادیت کے ناقابل تنسیخ حق کا مطالبہ کرنے پر ظلم وتشدد کا نشانہ بنایا جارہا ہے ۔ اقوام متحدہ کی سیکیورٹی کونسل کی قراردادوں میں تنازعہ کشمیر کا حل جموں کشمیر کے عوام کو اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنے کے لئے استصواب رائے کا حق دینا ہے۔ کشمیری عوام کو ان کے بنیادی حق سے محروم کرنے کے لئے ہند طاقت کا بے رحمانہ استعمال کررہا ہے۔کشمیریوں کی تحریک آزادی کو کچلنے کے لئے ان کے حق خودارادیت کو ”دہشت گردی“ قراردینے کا پرا پیگنڈا کیا جا رہا ہے۔ ہند کی جانب سے حقائق کو توڑ مروڑ کر دنیا کو گمراہ کرنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی ۔وزیر خارجہ نے سلامتی کونسل پر زور دیا کہ کشمیریوں پر بہیمانہ ہندوستانی مظالم رکوانے کے لئے فوری اقدامات کئے جائیں۔ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق کشمیریوں کو ان کا استصو اب رائے کا حق دلایا جائے ۔انہوں نے کہا کہ عالمی برادری ہند کو جنگ کی آگ بھڑکانے سے باز رکھے ۔ نئی دہلی کشیدگی کو ہوا دینے کے بجائے پاکستان اور کشمیریوں کے ساتھ بات چیت کا راستہ اپنائے تاکہ جنوبی ایشیا میں امن واستحکام کو یقینی بنایا جاسکے۔ 

اپنا تبصرہ بھیجیں