’یہ مسجد ہے تاج محل نہیں‘

گزشتہ کچھ عرصے سے پاکستان میں مساجد میں نکاح کا رجحان عام ہواہے ،اب لوگ مہنگے ریستوران یاشادی ہال کے بجائے مساجد میں سادگی سے نکاح کرنے کو ترجیح دیتے ہیں۔ لیکن جب سے مساجد میں باقائدہ پروفیشنل فوٹوگرافی اور ویڈیو شوٹنگ کااہتمام کیاجانے لگا ہے کئی حلقوں کی جانب سے اسے تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے سوال اٹھایاجارہا ہے کہ اس میں سادگی کہاں ہے؟
اس بحث نے اُس وقت زور پکڑا جب چند روز قبل سوشل میڈیا پر پاکستان کی معروف اداکارہ عروہ حسین کے بھائی کے نکاح کی تصاویر وائرل ہوئیں۔ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں واقع فیصل مسجد کے احاطے میں لی گئی تصاویرپر ٹویٹرصارفین کی جانب سے اعتراض سامنے آیا۔ 
 احتشام الحق نامی صارف نے لکھا کہ ’خدارا یہ مسجد ہے تاج محل نہیں ، مسجد اللہ کا گھر ہے ۔ ‘
 ؔ’اخلاقی اقدار کاخیال رکھنے کی شرط پرفوٹوگرافی کی اجازت دی جاتی ہے‘
کچھ صارفین نے مسجد کی انتظامیہ کو قصوروار ٹھہرایاجبکہ کچھ کے خیال میں ’یہ سب وفاقی ترقیاتی ادارے کی اجازت سے ہوتاہے‘۔

View image on Twitter
View image on Twitter

Ihtisham ul Haq@iihtishamm

🙏

خدارا یہ مسجد ہے تاج محل نہیں۔ مسجد اللہ کا گھر ہے1,8386:24 PM – Mar 28, 2019668 people are talking about thisTwitter Ads info and privacy

اس حوالے سے اردو نیوز نے وفاقی ترقیاتی ادارے کے ترجمان سے بات کی تو انہوں نے بتایا کہ ’ مسجد میں نماز پڑھنے کے مرکزی ہال میں فوٹو گرافی کی اجازت نہیں ہوتی۔ سی ڈی اے کی طرف سے ایسے جوڑوں کو فوٹوگرافی کی اجازت ان شرائط پر دی جاتی ہے کہ وہ اخلاقی قدروں اور متعلقہ قواعد کا خیال رکھیں گے۔‘
 انہوں نے مزید بتایا کہ ’فوٹو گرافی کے لیے سی ڈی اے نے پانچ ہزار روپے کی فیس بھی عائد کررکھی ہے۔ ‘
سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ان تصاویر پرجہاں کچھ صارفین نے اعتراض اٹھایاوہیں کچھ صارفین ان کی حمایت میں بھی بولے۔  بہرام علی نے لکھا ’فیصل مسجد ایک سیاحتی مقام ہے، جوہورہا ہے باہر ہورہا ہے مسجد کے اندر نہیں۔ ‘ 

View image on Twitter
View image on Twitter
View image on Twitter
View image on Twitter

Asif Khattak@asif_khattakPti

خیرانگی ہےکہ خونی لبڑل مافیاں سرعام ایسی حرکتیں کر رہاں ہےجن سے مذہبی طبقہ کےجذبات مجروح ہو رہے ہے لیکن حکومت حاموش ہے۔فیصل مسجد میں ماڈلنگ نہایت شرمناک فعل ہے جسکے حلاف حکومت کو سخت کاروایی کرنی چاہیے۔
سر @ShehryarAfridi1 صاھب @Ali_MuhammadPTI @ImranKhanPTI#GhareebKaEhsas21512:23 AM – Mar 28, 2019181 people are talking about thisTwitter Ads info and privacy

جوئی ٹپس کے نام سے ٹوئٹر ہینڈل نے تبصرہ کیا کہ ’مسجد ایک سماجی پلیٹ فارم ہے،اپنی جہالت اپنے اندر ہی رکھیں اور آگے بڑھنا سیکھیں۔‘

Joe Tipps@TippsJoeReplying to @afridi_afaan @immorternal1

Chotee soch !!! Masjid is supposed to be a social platform. Keep your jahiliyat inwards and learn to grow. Not doing Islam any favour here.1:56 PM – Mar 29, 2019Twitter Ads info and privacySee Joe Tipps’s other Tweets

اپنا تبصرہ بھیجیں