2018 کے الیکشن میں دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائے گا: وزیراعظم کا صادق آباد میں خطاب

کسی نے کرپشن کی سیاست کی اور کسی نے گالیوں کی سیاست کا وعدہ کیا، عوام جانتے ہیں کہ کون سی جماعت کام کرتی ہے: شاہد خاقان عباسی کا تقریب سے خطاب

صادق آباد: (سنہرادور آن لائن) صادق آباد میں آر این ایل جی کی ترسیل اور فراہمی کے منصوبے کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کسی نے کرپشن کی سیاست کی اور کسی نے گالیوں کی سیاست کا وعدہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا 2018 کے الیکشن میں دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائے گا، عوام جانتےہیں کہ کون سی جماعت کام کرتی ہے۔

وزیراعظم نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا آر ایل این جی کے منصوبے کو 2 سال سے بھی کم مدت میں مکمل کیا گیا۔ انہوں نے کہا جب ن لیگ کی حکومت آئی تو گیس اور توانائی کا بحران تھا، پاکستان ان بحرانوں کو حل کیے بغیر ترقی نہیں کر سکتا تھا لیکن ن لیگ نے توانائی کے مسائل آج کیلئے نہیں اگلے 15سال کیلئے بھی حل کر دیئے۔

شاہد خاقان عباس نے کہا حکومت سنبھالی تو گیس سے چلنے والے بجلی کے کار خانے بند تھے، آج بجلی کے کارخانے بھی چل رہے ہیں اور گیس بھی آ رہی ہے، اضافی گیس مہیا کیے بغیر پاکستان کے مسائل حل نہیں ہو سکتے تھے۔

وزیراعظم نے مزید کہا پاکستان کی تاریخ میں 42 انچ قطر کی کوئی گیس پائپ لائن نہیں ڈالی گئی، نوازشریف وہ لیڈر ہے جو صرف وعدے نہیں کرتا بلکہ کام کر کے دکھاتا ہے۔ ان کا کہنا تھا ماضی کی حکومتیں 15 سال میں اپنے دور کا کوئی ایک منصوبہ دکھا دیں، کیا یہ پمپنگ اسٹیشن پہلے نہیں بن سکتا تھا؟، کیا سارے منصوبے لانا (ن) لیگ کی ہی ذمہ داری ہے۔

شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا جتنے گیس کے کنکشن دیے گئے ایک بھی سفارش پر نہیں دیا، آج ملک میں کوئی صنعت لگانی ہو یا کوئی کارخانہ آپ کو گیس میسر ہے۔ انہوں نے کہا 2013 میں حکومت آئی تو 1800 کلو میٹر موٹر وے تعمیر کرائی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں