چینی سائنس دانوں کا کارنامہ، ماؤنٹ ایورسٹ پر دنیا کابلند ترین خود کار ویدر اسٹیشن نصب

چینی محقیقین نے ماؤنٹ ایورسٹ پر دنیا کابلند ترین خود کار ویدر اسٹیشن نصب کردیا۔

چینی سائنسی محققین کی جانب سے موسمیاتی تاریخ کا یہ ایک اہم کارنامہ ہے۔

ساؤتھ چائنا مارننگ پوسٹ کی رپورٹ کے مطابق خود کار موسمی حالات کا تجزیہ کرنے والا یہ ویدر اسٹیشن 8,800 میٹر کی بلندی پر نصب کیا گیا۔

چینی اخبار کے مطابق موسمی اسٹیشن برف اور برف کی موٹائی کی پیمائش کے لیے نصب کیا گیا ہے۔ 12 رکنی ٹیم نے دنیا کی اس بلند ترین چوٹی پر ویدر اسٹیشن کا سامان پہنچایا۔

ساؤتھ چائنا مارننگ پوسٹ نے مزید تحریر کیا کہ سمٹ مشن پروجیکٹ میں 5 سائنسی تحقیقاتی ٹیمیں شامل ہیں۔ پروجیکٹ میں 16 سائنسی گروپس، 270 سے زائد محققین بھی شامل ہیں۔

اس سے قبل بالکونی اسٹیشن کو دنیا کی بلند ترین ویدر اسٹیشن کا درجہ حاصل تھا۔

بالکونی اسٹیشن کو 2019 میں امریکی اور برطانوی سائنسدانوں نے ایورسٹ پر نصب کیا تھا اور یہ اسٹیشن سطح سمندر سے تقریباً 8,430 میٹر کی بلندی پر واقع ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں