وادی سندھ کی تہذیب کو ماحولیاتی تبدیلی نے تباہ کیا، نئی تحقیق

کراچی (نیوز ڈیسک) تقریباً تین ہزار سال قبل وادیٔ سندھ کی تہذیب کی تباہی کے حوالے سے کئی ایسے نظریات موجود ہیں جو انسان کو قابل بھروسہ معلوم ہوتے ہیں لیکن ریاضی کے ایک نئے ماڈل کے ذریعے اب معلوم ہوا ہے کہ انڈس ویلی سیولائزیشن کی تباہی کی وجہ ماحولیاتی تبدیلی ہو سکتی ہے۔ غیر ملکی سائنسی جریدے میں شائع ہونے والی تحقیق (Chaos: An Interdisciplinary Journal of Nonlinear Sciences) کے مطابق، روچیسٹر یونیورسٹی آف ٹیکنالوجی کے ماہر ریاضی نشانت ملک اپنی ایک نئی تحقیق سامنے لائے ہیں جس میں یہ نئے شواہد سامنے آئے ہیں کہ مون سون کے سیزن کی تبدیلی، بڑھتی خشک سالی اور قحط نے کانسی کے زمانے (برونز ایج) کے زوال میں اہم کردار ادا کیا ہوگا۔ رپورٹ کے مطابق، شمالی بھارت میں پائی جانے والی ایک غار میں رسوب کلسی فرش (Stalagmite) میں پائے جانے والے ایک مخصوص ہم جا (آئسو ٹوپ) کا جائزہ لینے کے بعد ماہرین نے سابقہ تحقیق میں یہ بتایا تھا کہ گزشتہ 5700؍ سال کے دوران خطے میں مون سون کے سیزن میں اوسطاً کتنی بارش ہوئی ہوگی۔ نئی تحقیق میں نشانت ملک نے

اعداد و شمار کا جائزہ لیا ہے جس سے معلوم ہوا ہے کہ خط میں اس وقت مون سون کے نمونوں میں تبدیلی آنا شروع ہوئی جب یہ تہذیب ابھرنا شروع ہوئی تھی، اور اس کے بعد جب اس تہذیب کا زوال آیا تو اس وقت مون سون کا پیٹرن بالکل متضاد تھا۔ نشانت ملک کا کہنا ہے کہ قدیم ارضی ادوار میں آب و ہوا کے مطالعے کے دوران جب ہم اعداد و شمار کا جائزہ لیتے ہیں تو ان میں قلیل وقت کے تسلسل کے ساتھ غیر یقینی پائی جاتی ہے اور یکسانیت بھی نہیں ہوتی۔ جہاں تک ریاضی اور ماحولیات (کلائمٹ) کا تعلق ہے تو ہم اکثر و بیشتر موسم اور ماحول کو سمجھنے کیلئے ڈائنامک سسٹمز استعمال کرتے ہیں۔ لیکن ڈائنامک سسٹم کے نظریات کا اطلاق قدیم ارضی ادوار کے آب و ہوا کے مطالعے پر نہیں ہوتا۔ یاد رہے کہ انڈس ویلی سیولائزیشن، جسے ہڑپا تہذیب بھی کہا جاتا ہے، دنیا کی ان تین ابتدائی تہذیبوں میں سے ایک ہے جو جنوبی ایشیا کے شمال مغربی حصے میں ابھرنا شروع ہوئیں۔ مصر اور میسوپوٹیمیا کی تہذیبیں اس کے علاوہ ہیں۔ اب، نشانت ملک کی تحقیق کے نتائج دیکھ کر ایسا لگتا ہے کہ اس تہذیب کا زوال جنگوں یا زلزلوں سے نہیں آیا جیسا کہ ماضی میں کچھ ماہرین کہہ چکے ہیں۔ یہ ماحولیاتی تبدیلی ہی ہوگی جس کی وجہ سے وادی سندھ کے لوگ نئے مقامات کی جانب پھیل گئے اور ہجرت کر گئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں