خوبصورت ہاتھ پاؤں کیلئے مینی، پیڈی کیور کی آسان ٹپس

متوازن شخصیت کے لیے صرف چہرہ ہی نہیں بلکہ ہاتھوں اور پاؤں کا صاف اور خوبصورت نظر آنا بھی نہایت لازمی ہے، ہاتھ پاؤں کی خوبصورتی بڑھانے کے لیے بغیر کسی پارلر گئے اور پیسے خرچ کیے گھر میں ہی ان کی دیکھ بھال اور حفاظت کر کے رنگت نکھاری جا سکتی ہے۔

جس طرح انسان کی شخصیت میں شکل وصورت کو بے حد اہمیت حاصل ہے بالکل اسی طرح دلکش اور نرم و نازک ہاتھ پاؤں بھی شخصیت کو پُر کشش اور خوبصورت دکھانے میں اہم کردار اداکرتے ہیں، ہمارے جسم میں سب سے زیادہ نظر انداز ہونے والا حصہ پاؤں ہوتے ہیں جن کی رنگت اگر چہرے اور ہاتھوں سے مختلف ہو تو یہ کافی معیوب لگتا ہے اور پوری شخصیت غیر متوازن نظر آ تی ہے ۔

موسم کی تبدیلیوں سے بچانے اور ہاتھ، پاؤں کی خوبصورتی برقرار رکھنے کے لیے ضروری نہیں کے مینی کیور اور پیڈی کیور کے لیے پارلر کا رُخ ہی کیا جائے، اگر مصروف زندگی کے سبب آپ کے پاس پارلر جانے کا وقت نہیں تو گھر میں بھی مینی اور پیڈی کیور با آسانی کی جاسکتی ہے۔

مینی کیور، پیڈی کیور کے لیے ضروری سامان:

گھر میں مینی کیور اور پیڈی کیور کے لیےسامان کا ہونا لازمی ہے، اس بات کو یقینی بنائیں کہ آپ کے پاس نیل پالش ریموور، کاٹن بالز، باڈی اسکرب، تولیہ، نیل فائلر، نیل کلیپر، نیل پالش، بیس کوٹ، ٹاپ کوٹ، گرم پانی سے بھرا پیالہ اور موئسچرائزنگ شاور جیل موجود ہو۔

مینی کیور پیڈی کیور مرحلہ وار کیسے کیا جائے ؟

سب سے پہلا مرحلہ نیل پالش صاف کرنے کا ہے، نیل پالش کو کاٹن بالز کی مدد سے نیل پالش ریموور میں بھگو کر 10 سے 15 سیکنڈ کے لیے ناخنوں پر رکھ کر صاف کریں۔

گرم پانی سے بھر ا پیالہ لیں (جسمیں آپ ساری انگلیاں بآسانی ڈبوسکیں)، اس گرم پانی میں شاورجیل یا اروماباتھ سینٹڈ سوپ یا موئسچرائزنگ سوپ کا ڈالیں۔

مینی کیور اور پیڈی کیور کے لیے جس محلول کا انتخاب کیا گیا ہے اس پانی میں جھاگ بنائیں اور اب اس پانی میں 15 سے 20 منٹ تک کے لیے انگلیوں کو ڈبو کر رکھیں۔

انگلیوں کو پیالے میں ہی رکھتے ہوئے کیوٹیکل پشر کی مدد سے کیوٹیکلز کو احتیاط کے ساتھ پیچھے کی طرف دھکیلیں، یہاں تک کہ وہ انگلی کی کھال سے جا ملیں۔

اگر کچھ کیوٹیکل اوپر اُٹھ گئے ہیں تو انہیں کَٹر کی مد د سے کاٹ لیں لیکن کاٹنے سے ان کیوٹیکل کو اس پانی میں بھگونا ہرگز نہ بھولیں، ناخنوں کے قریب پتلی کھال کے لیے کیوٹیکل موئسچرائزر لگا کر مساج کریں ۔

نیل برش کا استعمال کرکے ہاتھوں اور پیروں کے ناخنوں کو اچھی طرح سے صاف کریں، برش کا انتخاب کرتے وقت اس بات کا خیال رکھیں کہ وہ نرم ریشے والا ہو یا پھر اسفنج کا بھی استعمال کیا جاسکتا ہے۔

برش کی مدد سے ہاتھوں کو اوپر سے نیچے کی طرف رگڑ کر صاف کریں، اس مرحلے کے بعد چند منٹ کے لیے دوبارہ ہاتھ پانی میں بھگو دیں تاکہ سارا میل کچیل نکل جائے۔

اس کے بعد نیم گرم پانی سے دھولیں اور ہوا میں خشک کریں یا صاف تولیے یا ٹشو سے پونچھیں۔

پیڈی کیور کرتے وقت پیروں کی ایڑیوں اور تلووں کو جھانویں کی مدد سے صاف کریں تاکہ ایڑیوں کی خراب کھال صاف ہو جائے۔

ناخوں کو من پسند تراشیں

ہاتھوں اور پیروں کےناخن تراشیں، ناخنوں کے تراشنے کے وہی اسٹائل منتخب کریں، جس میں آپ کے ہاتھ اور پیر کی انگلیاں بے حد خوبصورت اور دلکش محسوس ہوں۔

کوشش کریں کہ ناخنوں کو تراشنے کے لیے لکڑی کا فائلر استعمال کیا جائے کیونکہ یہ جراثیموں سے پاک ہوتا ہے۔

اپنے ناخنوں کو فائلر کی مدد سے مطلوبہ شکل میں فائل کرلیں۔

اگر آپ کی انگلیاں لمبی ہیں تو ناخن گول شیپ میں تراشیں یا پھر چو کور شیپ بھی مناسب ہے، انگلیاں موٹی ہوں توناخن نوکیلے انداز میں فائل کریں تاکہ انگلیاں لمبی اور نازک دکھائی دیں۔

ناخنوں کو تراشنے کے بعد معیاری اور بہترین موئسچرائزنگ جیل یا کریم کی مدد سے ہاتھوں پر اچھی طرح مساج کریں، خاص طور پر اسکربنگ اور ہاتھوں کو اسفنج کی صفائی کے بعد کیونکہ اس عمل کے بعد آپ کے ہاتھوں اور پیروں کو ہائیڈریٹ کرنے کی ضرورت ہے۔

یہ عمل آپ کے ہاتھوں اور پیروں کی نرمی اور دلکشی میں اضافہ کرے گا۔

ہاتھوں اور پیروں کے ناخنوں کے لیے ہائیڈریشن کا عمل بے حد ضروری ہے۔

نیل پالش لگانے سے قبل کوئی بھی معیاری نیل آئل ہاتھوں اور پیروں کے ناخنوں پرکاٹن بالز کی مدد سے لگائیں اور تب تک نیل پالش نہ لگائیں جب تک یہ تیل ناخنوں میں جذب نہ ہوجائے ۔

اب یہ آخری مرحلہ ہے جس میں آپ اپنے من پسند رنگ کی نیل پالش لگائیں گیں، نیل پالش لگانے کے لیے سب سے پہلے ناخنوں پر بیس کوٹ لگائیں اور پھر کچھ دیر انتظار کریں۔

جب یہ سوکھ جائے تو ان پر نیل پالش لگائیں۔

اگر نیل پالش پھیل جائے تو اس کو کیو ٹپ کی مدد سے صاف کرلیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں