پہلی دفعہ چیئرمین قومی اقلیتی کمیشن ہندو کو بنایا گیا، چیلا رام کیولانی

قومی اقلیتی کمیشن کے چیئرمین چیلا رام کیولانی کا کہنا ہے کہ پاکستان کی تاریخ میں پہلی دفعہ اس کمیشن کا چیئرمین کسی ہندو کو بنایا گیا ہے۔

چیئرمین قومی اقلیتی کمیشن چیلا رام کیولانی نے چیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل قبلہ ایاز اور پارلیمانی سیکریٹری برائے مذہبی امور شنیلا رتھ کے ہمراہ پریس کانفرنس کی۔

اس موقع پر چیلا رام کیولانی نے کہا کہ اس کمیشن میں تمام صوبوں سے ارکان شامل ہیں، ہم کہیں سے ہجرت کر کے نہیں آئے ہیں، ہم نے مل جل کے ایسا قانون بنایا ہے جو سب کیلئے برابر ہو۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ 27 سال سے کمیشن بنا ہوا ہے مگر کوئی بل نہیں بنا، قومی اقلیتی کمیشن بل 4 ماہ کی محنت کے بعد بنایا ہے، حکومت نے بھی کہا کہ وہ یہ بل پارلیمنٹ سے پاس کریں گے۔

پارلیمانی سیکریٹری برائے مذہبی امور شنیلا رتھ نے پریس کانفرنس میں کہا کہ ہم نے پاکستان بنانے میں کردار ادا کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیرِ اعظم عمران خان سمجھتے ہیں کہ پاکستانی اقلیتی برادری پاکستانی شہری ہیں، پاکستان میں اقلیتوں کے ساتھ کوئی زیادتی نہیں ہو رہی۔

چیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل قبلہ ایاز نے پریس کانفرنس میں کہا کہ ہندوستان کا اقلیتی برادری کے ساتھ اچھا رویہ نہیں ہے۔

قبلہ ایاز کا یہ بھی کہنا ہے کہ پاکستان کے میڈیا نے ہمیشہ پاکستان کے مفاد کے لیے کام کیا ہے، نیشنل اقلیتی کمیشن کو اجاگر کرنا چاہیئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں