ہلال احمر پاکستان ، کرونا وائرس کی روک تھام کے لیے حکومت کے شانہ بشانہ مصروف عمل ہے

اسلام آباد (سنہرا دور): انٹرنیشنل فیڈریشن آف ریڈ کراس اینڈ ریڈ کریسنٹ سوسائٹی اور انٹرنیشنل کمیٹی آف ریڈکراس نے اس بات کا یقین دلایا ہے کہ وہ ہلال احمر پاکستان کی جانب سے پاکستان میں کرونا وائرس کے روک تھام اور آگاہی مہم کے سلسلے میں کی جانے والی کوششوں میں شانہ بشانہ اس کے ساتھ کھڑی ہیں اوراس ضمن میں کسی بھی قسم کی مددواعانت فراہم کرنے سے دریغ نہیں کریں گی۔انسانی فلاح و بہبود سے منسلک ان دونوں عالمی اداروں کی اعلیٰ قیادت کی جانب سے مکمل تعاون کا اظہار ہلال احمر پاکستان کے چیئر مین ابرار الحق اور سیکرٹری جنرل خالد بن مجید کی جانب سے حالی ہی میں جنیوا میں واقع دونوں اداروں کے ہیڈ کورٹر کے دورے کے دوران کیا گیا۔ جنیوا میں ہونے والی ان اعلیٰ سطح کی ملاقاتوں میں ابرار الحق نے ہلال احمر پاکستان کی جانب سے ملک میں کروناوائرس کے روک تھام کے سلسلے میں کی جانے والی کوششوں کوتفصیل سے بیان کیا۔ انہوں نے کہا کہ کرونا وائرس سے قیمتی انسانی جانوں کو لاحق خطرات سے نبر د آزما ہونے کے لئے ہلال احمر پاکستان نے ایک جامع ایکشن پلان وضع کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہلال احمر پاکستان نے سوشل میڈیاپر “ہیش ٹیگ کرونااحتیاط” کے نام سے ایک منظم ومربوط آگاہی مہم کے آغاز کرنے کے علاوہ دور رس نتائج کے حامل کئی اور اقدامات بھی اٹھائے ہیں۔ انہوں نے مزید بتایا کہ کرونا وائرس سے متعلق آگاہی کے لئے معلوماتی کتابچے اور بینرز بھی لو گوں میں تقسیم کئے جارہے ہیں تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگ بروقت احتیاطی تدابیر اختیار کر کے اس مہلک و جان لیوا وبا سے محفوظ رہے سکیں۔سیکریٹری جنرل خالد بن مجید نے اس موقع پر آئی ایف آر سی اور انٹرنیشنل کمیٹی آف ریڈکراس کی اعلیٰ قیادت کو بتایا کہ ہلال احمر پاکستان نے چمن بارڈر پرتما م تر سہولتوں سے آراستہ سکریننگ سینٹر کے علاوہ ایران کی سرحد کے قریب واقع علاقے تفتان میں بھی ایک قرنطینہ (Quarantine)قائم کیا ہے تاکہ پاکستان میں داخل ہونے مشتبہ مریضوں کو وہاں رکھا جا سکے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ مشتبہ مریضوں کو نامزدطبعی اداروں تک لے جانے کے لئے ملک کے تمام بڑے ہوائی اڈوں پر طبعی سہولتوں سے مزین ایمبولینسیں بھی کھڑی کر دے گئی ہیں۔انٹرنیشنل فیڈریشن آف ریڈ کراس اینڈ ریڈ کریسنٹ سوسائٹی اور انٹرنیشنل کمیٹی آف ریڈکراس نے ہلال احمر پاکستان کی جانب سے کرونا وائرس کے روک تھام کے سلسلے میں کی جانے والے کو ششوں کو سراہا اوروائر س سے متعلق تشخیصی کٹس اور فیس ماسک کی فراہمی کا وعدہ کیااور اس ضمن میں تکنیکی طریقہ ہائے کار وضع کیا جا رہا ہے۔ اس موقع پر کئی اور منصوبوں پر باہمی تعاون کو بڑھانے کے عزم کا بھی اظہار کیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں