پی ایس ایل فائیو، لاہور قلندرز کو ایک بڑا دھچکا

پاکستان سپر لیگ فائیو کے سیمی فائنل سے قبل لاہور قلندرز کو ایک بڑا دھچکا اس وقت لگا جب اس کے آسٹریلین پلیئر کرس لین نے اس بات کا اعلان کیا کہ وہ پی ایس ایل چھوڑ کر فوری طور پر وطن واپس جارہے ہیں۔

جارح مزاج بیٹسمین نے اتوار کی دوپہر لاہور قلندرز کی جانب سے 55 گیندوں پر 113 رنز کی شاندار اننگز کھیل کر لاہور قلندرز کو ملتان سلطانز کے خلاف فتح دلوا کر ٹیم کو سیمی فائنل میں پہنچایا تھا لیکن کرس لین اب سیمی فائنل میں ٹیم کو دستیاب نہیں ہوں گے۔

کرس لین نے سوشل میڈیا پر اعلان کیا کہ انہوں نے پاکستان میں اپنا قیام انجوئے کیا لیکن موجودہ حالات میں انہوں نے گھر واپس جانے کا فیصلہ کیا ہے، کرس لین کا کہنا تھا کہ انہوں نے ہمیشہ موقف اختیار کیا کہ زندگی میں کرکٹ کے علاوہ بھی بہت کچھ ہے اور یہی ان کے فیصلے کی بنیاد ہے، انہوں نے امید ظاہر کی کہ ناک آوٹ مرحلے میں اچھا پرفارم کرے گی۔

اس سے قبل جنوبی افریقا کے ڈیوڈ ویسا اور سری لنکا کے سیکوگے پرسنا نے بھی لاہور قلندرز کے ساتھ پی ایس ایل میں اپنا سفر ادھورا چھوڑ کر وطن واپسی کا اعلان کیا تھا، غیر ملکی کرکٹرز نے پی ایس ایل ادھورا چھوڑنے کا فیصلہ پاکستان کرکٹ بورڈ کی پیشکش کے بعد کیا ۔

پی سی بی نے دنیا بھر میں کورونا وائرس کی وبا پھیلنے کے بعد کھلاڑیوں کو آپشن دیا تھا کہ اگر وہ چاہیں تو گھروں کو واپس روانہ ہوسکتے ہیں، پی سی بی کی پیشکش کے بعد پہلے مرحلے میں گیارہ کھلاڑیوں نے لیگ چھوڑنے کا فیصلہ کیا تھا جس کے بعد اسلام آباد یونائٹیڈ کے تین پلیئرز بھی گھر چلے گئے۔

کرس لین، ڈیوڈ ویسا اور پرسنا کی وطن واپسی کے بعد لاہور قلندرز کے پاس فی الحال بین ڈنک، سمت پٹیل اور ڈین ویلاس بطور غیر ملکی پلیئرز موجود ہیں۔

لاہور قلندرز کی ٹیم منگل کو پی ایس ایل کے سیمی فائنل میں کراچی کنگز سے مقابلہ کرے گی۔

کراچی کنگز کے ایلیکس ہیلز اور مچل میک کلینگن بھی پاکستان سپر لیگ چھوڑ کر گھروں کو روانہ ہوچکے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں